تحریک انصاف حکومت نے ریکارڈ قانون سازی کی،بشارت راجہ

   تحریک انصاف حکومت نے ریکارڈ قانون سازی کی،بشارت راجہ

  



لاہور(نمائندہ خصوصی) صوبائی وزیر قانون و پارلیمانی امور بشارت راجہ نے کہا کہ پی آئی سی واقعہ پر انتظامی غفلت کا جائزہ لینے کیلئے آئی جی پنجاب نے بھی انکوائری کمیٹی تشکیل دیدی ہے اور حکومتی کمیٹی نے بھی اپنی رپورٹ وزیر اعلی پنجاب کو جمع کروادی ہے،پنجاب بار کونسل میرا لائسنس معطل کرنے کا شوق پورا کر لے جب میں نے ان سے رکنیت ہی نہیں لی تو پھر معطلی کیسی،پنجاب اسمبلی کی واحد اپوزیشن ہے جس نے قانون سازی کے موقع پر ریکارڈ بائیکاٹ کئے ہیں ابھی تک پنجاب میں کسی کو پی اے سی کا چیئرمین بنانے کا فیصلہ نہیں کیا۔وہ پنجاب اسمبلی کے کیفے ٹیریا میں پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے۔ان کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے اب تک ریکارڈ قانون سازی کی ہے اپوزیشن ایوان کے اندر کچھ اور بات کرتی ہے تو میڈیا سے کچھ اور بات کرتی ہے یہ واحد اپوزیشن ہے کہ نے جس نے قانون سازی ہر مراحل پر ریکارڈ بائیکاٹ کئے ہیں۔راجہ بشارت کاکہناتھاکہ لاہور میں صفائی کے معاملات پر توجہ دیں گے وزیر اعلی نے نوٹس لے لیا ہے بار کونسل کی جانب سے اپنا لائسنس معطل کرنے پر ان کاکہناتھاکہ انہوں نے تو کبھی پریکٹس نہیں کی بار کونسل لائسنس معطلی کا اپنا شوق پورا کر لے۔ پی آئی سی معاملے پر حکومتی تحقیقاتی کمیٹی نے رپورٹ دیدی ہے اس پر ایکشن ہو گا جبکہ اس ایشو پر آئی جی پنجاب نے بھی انتظامی معاملے پر کمیٹی تشکیل دیدی ہے۔ پی آئی سی کیس پر عدالت نے انصاف دینا ہے حکومت کاکام مقدمات درج کرکے گرفتاریاں کرنا تھا۔

 بشارت راجہ

مزید : صفحہ آخر


loading...