”کل رات رانا ثناءاللہ بہت زیادہ مطمئن اور انہوں نے اپنے ایک قریبی آدمی سے کہا کہ ۔ ۔ ۔“ سینئر صحافی نے تہلکہ خیز دعویٰ کردیا

”کل رات رانا ثناءاللہ بہت زیادہ مطمئن اور انہوں نے اپنے ایک قریبی آدمی سے ...
”کل رات رانا ثناءاللہ بہت زیادہ مطمئن اور انہوں نے اپنے ایک قریبی آدمی سے کہا کہ ۔ ۔ ۔“ سینئر صحافی نے تہلکہ خیز دعویٰ کردیا

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثناءاللہ کی ضمانت منظور ہوگئی ہے اور اس پر تبصرہ کرتے ہوئے سینئر صحافی عارف حمید بھٹی نے دعویٰ کیا ہے کہ گزشتہ رات بہت مطمئن تھے اور بادی النظر میں انہوں نے اپنے قریبی آدمی کو بتایا کہ کل رات آپ کےساتھ ہوں گا۔

نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے عارف حمید بھٹی کاکہناتھاکہ حیرت کی بات ہے کہ اتنی مقدار میں برآمد ہوئی ہو تواے این ایف کی ہسٹری کا شایدیہ پہلا کیس ہوگا کہ ضمانت اتنی جلدی ہوگئی ہو، ایک طرف شہریار کہتے تھے کہ فوٹیج ہے ، عدالت میں ثابت کریں گے، عدالت میں جو ثبوت آتے ہیں، اسی پر فیصلہ ہوتاہے ۔انہوں نے کہاکہ بہر حال رانا کی قریبی دوستوں سے بات ہوئی توکہاکہ کل ضمانت ہوجائے گی ، کل آپ کیساتھ ہوں گا، لگتا ہے کہ اے این ایف نے جلدی میں قانونی تقاضے پورے نہیں کیے ، دس کلو سے زیادہ پر ضمانت ہوتی نہیں تھی ، یہ مسلم لیگ ن اور رانا ثنا کے لیے بہت اچھی خبر اور حکومتی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے کہ شایدقانون کی بجائے انتقامی کارروائی پر یقین رکھتے ہیں، یہ ضمانت ہونا اے این ایف کے لیے بھی پیغام ہے کہ آپ کاکام بھی انتقام کی طرف جارہاہے ۔

عارف حمید بھٹی کاکہناتھاکہ شہریار آفریدی کو اب استعفیٰ دے دینا چاہیے ، اگرعدالت نے سمجھا ہے کہ یہ کیس غلط ہے اور اسی بنیاد پر ضمانت لی ، پھروہ منشیات تھی کس قسم کی ، رکھی رکھائی کس نے تھی ، اس کا تعین کریں، شہریار کے لیے بھی امتحان ہے کہ کیسے ایک سابق وزیر پر اس طرح کا مقدمہ بنایا، آج وہ مقدمے کے حق میں کوئی چیزثابت نہیں کرسکے، سیاستدانوں پر اس طرح منشیات کے اتنے بھاری کیس کرنا جمہوریت کے لیے بھی دشمنی ہے اور میری نظر میں ایک ہی سوال ہے کہ رانا کے علم میں نہیں کہ یہ منشیات کس نے رکھیں اور کون لایا تھا، ایسا ہی ہوتا رہا تو لوگوں کا اداروں پر اعتماد نہیں رہے گا۔

مزید : قومی


loading...