کراچی ٹیسٹ کے آخری روز تماشائی راستے سے ہی گھروں کو لوٹ گئے مگر کیوں؟

کراچی ٹیسٹ کے آخری روز تماشائی راستے سے ہی گھروں کو لوٹ گئے مگر کیوں؟
کراچی ٹیسٹ کے آخری روز تماشائی راستے سے ہی گھروں کو لوٹ گئے مگر کیوں؟

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان نے کراچی ٹیسٹ میں سری لنکن کرکٹ ٹیم کو آﺅٹ کلاس کرتے ہوئے ریکارڈفتح حاصل کر کے سیریز 0-1 سے اپنے نام کی اور یوں پاکستانیوں کو کافی عرصے بعد ٹیسٹ کرکٹ میں بھی کامیابی دیکھنا نصیب ہو گئی تاہم کچھ تماشائی تاریخی لمحات دیکھنے سے محروم رہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی ٹیسٹ کے آخری روز کا کھیل صرف 13منٹ میں ہی ختم ہو گیا جس پر اکثر تماشائی راستے سے ہی گھروں کو واپس لوٹ گئے۔ میچ شروع ہونے سے قبل تماشائیوں کی ایک بڑی تعداد نیشنل سٹیڈیم پہنچ چکی تھی لیکن کھیل کا مجموعی دورانیہ 13 منٹ تک محدود رہا جس کے باعث کئی تماشائی راستے سے ہی واپس گھروں کو لوٹ گئے۔

فتح کے بعد میزبان کرکٹرز نے مختلف انکلوژرز کا دورہ کیا اور تماشائیوں سے ہاتھ ملانے کے علاوہ آٹو گراف دئیے اور سیلفیاں بھی بنوائیں، کھلاڑیوں نے گراﺅنڈ سٹاف کے پاس جاکر بھی شکریہ ادا کیا جبکہ سیکیورٹی اہلکار بھی قومی کرکٹرز کے ساتھ سیلفیز بنواتے رہے۔

مزید : کھیل


loading...