خوشگوار شادی کا راز الگ الگ بستر میں سونے میں پوشیدہ، تازہ تحقیق میں انتہائی حیرت انگیز انکشاف

خوشگوار شادی کا راز الگ الگ بستر میں سونے میں پوشیدہ، تازہ تحقیق میں انتہائی ...
خوشگوار شادی کا راز الگ الگ بستر میں سونے میں پوشیدہ، تازہ تحقیق میں انتہائی حیرت انگیز انکشاف

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) خوشگوار ازدواجی زندگی ہر شادی شدہ جوڑے کی خواہش ہوتی ہے اور اب سائنسدانوں نے اپنی نئی تحقیق میں میاں بیوی کے باہمی جھگڑے ختم کرنے اور تعلق کو خوشگوار بنانے کے لیے ایک حیران کن مشورہ دے دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر میاں بیوی الگ الگ بیڈزپر سوئیں تو ان کا ازدواجی تعلق غیرمعمولی طور پر خوشگوار ہو سکتا ہے۔

یہ تحقیق میٹرس بنانے والی ایک کمپنی نے کروائی، جس کے نتائج میں ماہرین نے بتایا کہ الگ الگ بستروں میں سونے سے میاں بیوی کے تعلق میں حیران کن تبدیلی آتی ہے اور وہ پہلے سے زیادہ ایک دوسرے کے قریب آ جاتے ہیں۔ اس کی وجہ بیان کرتے ہوئے سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ سوتے ہوئے لوگوں کی کچھ بری عادتیں ہوتی ہیں جو ان کے شریک حیات کے لیے سخت ناگواریت کا سبب بنتی ہیں۔

ان عادات میں خراٹے لینا یا سوتے میں بستر پر ادھر ادھر لوٹتے رہنا ہے جس سے اس کے شریک حیات کی نیند خراب ہوتی ہے۔ یہ بظاہر معمولی بات ہے لیکن یہ میاں بیوی میں ایسی تلخی کی بنیاد رکھ سکتی ہے جو آگے چل کر طلاق کی صورت اختیار کر سکتی ہے۔ طلاق کی اس قسم کو ’سلیپ ڈیوورس‘ (Sleep Divorce)کہا جاتا ہے۔ 2016ءمیں جرمنی کی پیراسیلسس میڈیکل یونیورسٹی کے ماہرین نے بھی اس موضوع پر تحقیق کی تھی اور بتایا تھا کہ الگ بستروں پر سونے سے میاں بیوی کا تعلق خوشگوار ہوتا ہے۔ حتیٰ کہ اگر میاں بیوی الگ الگ کمروں میں سوئیں تو اس کے زیادہ مثبت اثرات ان کے ازدواجی تعلق پر مرتب ہوتے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...