جنسی تعلق کے ذریعے منتقل ہونے والی بیماری آدمی کے دماغ تک جا پہنچی

جنسی تعلق کے ذریعے منتقل ہونے والی بیماری آدمی کے دماغ تک جا پہنچی
جنسی تعلق کے ذریعے منتقل ہونے والی بیماری آدمی کے دماغ تک جا پہنچی

  



کنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) سیفلس (Syphilis)ایک جنسی بیماری ہے جو انفیکشن کی صورت میں جنسی عضو، مقصد و جسم کے دیگر حصوں میں ہوتی ہے تاہم آسٹریلیا میں جنسی بے راہ روی کے باعث ایک شخص کے دماغ کو یہ انفیکشن لاحق ہو گئی ہے۔ دی مرر کے مطابق یہ 39سالہ شخص آسٹریلوی شہر سڈنی کا رہائشی ہے جو کئی خواتین کے ساتھ غیرمحفوظ طریقے سے جنسی تعلق قائم کرتا رہا۔ کچھ عرصے بعد اس کے سر میں درد رہنے لگا۔ جب درد حد سے بڑھا تو وہ ڈاکٹروں کے پاس گیا جنہوں نے اس کے ٹیسٹ کرنے کے بعد انکشاف کیا کہ اس کا دماغ جنسی بیماری سیفلس کی لپیٹ میں آ چکا ہے۔

ڈاکٹروں نے بتایا کہ یہ انفیکشن دماغ سے ہوتی ہوئی اس کی آنکھوں کو بھی متاثر کر چکی ہے۔ اس کے بائی لیٹرل آپٹک نامی عصبی خلیے سوجن کا شکار ہو چکے تھے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ بیماری غیرمحفوظ جنسی تعلق سے لاحق ہوتی ہے اور ابتدائی طور پر یہ جنسی عضو کو متاثر کرتی ہے اور پھر جسم میں کہیں بھی پھیل سکتی ہے۔یہ مریض کو چھونے سے بھی دیگر لوگوں کو لاحق ہو سکتی ہے۔ تاہم اس کا علاج ممکن ہے۔ مذکورہ شخص کو بھی ڈاکٹروں نے اینٹی بائیوٹکس دیں اوروہ دو ہفتوں میں صحت مند ہو گیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...