قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے سیفران کا اجلاس چیئرمین اور اراکین کمیٹی آپس میں الجھ پڑے

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے سیفران کا اجلاس چیئرمین اور اراکین کمیٹی ...
قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے سیفران کا اجلاس چیئرمین اور اراکین کمیٹی آپس میں الجھ پڑے

  



اسلام آباد(آئی این پی)قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے سیفران کا اجلاس چیئرمین اور اراکین کمیٹی آپس میں الجھ پڑے,چئیرمین ساجد خان کا کہنا تھا کہ بریفنگ مکمل ہونے دیں پھر سوال کریں,اِس طرح نہیں ہوتا,رولز پڑھیں, قائمہ کمیٹی نےسفارش کی ہےکہ سابقہ فاٹاکےعلاقوں میں لوڈشیڈنگ کادورانیہ کم کیا جائے ,انضمام ہونےوالےاضلاع کی ہر تحصیل میں ایک ایک فیڈر لگایا جائے.

 قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے سیفران کا اجلاس چیئرمین کمیٹی ساجد خان کی سربراہی میں پارلیمنٹ ہاوس میں منعقد ہوا۔ اجلاس کے دوران چئیرمین ساجد خان اور رکن کمیٹی اقبال خان کےدرمیان لفظی تکرارشروع ہوگئی،رکن کمیٹی نےوزارت مواصلات کی بریفنگ شروع ہوتےہی سوالات شروع کردئیے،جس پردیکھادیکھی دیگراراکین کمیٹی نےبھی وزارت مواصلات کی بریفنگ کےدوران سوالات کی بوچھاڑشروع کر دی جس پرچیئرمین کمیٹی ساجدخان نےاظہاربرہمی کرتےہوئےکہاکہ آپ لوگ بریفنگ مکمل ہونے دیں پھرسوال کریں اس طرح نہیں ہوتا,آپ رولزکوپڑھیں.جواب میں رکن کمیٹی محمداقبال خان نےکہاکہ مجھےرولزکےلیکچرمت دیں,اپنےرولزبتائیں,اگرہماری بات نہیں سننی تومجھےکمیٹی سے نکال دیں جس پر چئیرمین کمیٹی نے کہا کہ احتجاج کرنا آپ کا حق ہے لیکن آپ ذرا قوانین کو پڑھ لیں۔رکن کمیٹی علی وزیرنے کہاکہ ہمارے منصوبوں کے حوالے سے سب کمیٹی بنا دیں۔چیئرمین کمیٹی ساجدنےکہاکہ اَب وقت کم ہےذیلی کمیٹی نہیں بن سکتی۔رکن کمیٹی ساجدطوری نےکہاکہ اگراسی طرح کمیٹی چلتی رہی تومیں اجلاس سےواک آؤٹ کردوںگا,ہمارے حلقوں کے بھی مسائل ہیں، اس طرح اجلاس ہوتا ہے؟۔

چئیرمین کمیٹی کی ارکان کو قواعد کے مطابق کارروائی جاری رکھنے کی ہدایت کر دی۔ ٹرائبل ایریا الیکٹرک سپلائی کارپوریشن کے حکام نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ فاٹا کا صوبہ خیبر پختون خوامیں انضمام ہونے کے بعد اب تک کل صارفین کی تعداد چار لاکھ 42ہزار ہے،ہمیں ساڑھے تین لاکھ میٹر لانے ہیں،اِن آٹھ اضلا ع میں انڈسٹری کی تعداد چار ہزار ہے جن سے پانچ سو ملین روپے آمدنی ہو رہی ہے۔ فاٹا کے انضمام ہو نے کےبعدحکومت کی جانب سےسبسڈی ختم کی جا رہی ہے۔اراکین کمیٹی کے سوال کے جواب میں ٹیسکو حکام نے بتایا کہ اعظم وارسک پر فیڈربنانے کیلئے فیز بیلٹی رپورٹ تیار کی جا رہی ہے ۔قائمہ کمیٹی نے سفارش کی ہے کہ ہر تحصیل میں ایک ایک فیڈر لگایا جائے۔رکن کمیٹی شاہد اقبال نےکہاکہ جہاں سب سےزیادہ ریکوری ہورہی ہےوہاں پرٹیسکووالےکمرشل کنکشن چھوڑ رہےجبکہ گھریلوکنکشن کاٹ رہے ہیں جسکے جواب میں حکام نےبتایاکہ اِن انضمام ہو نے والے آٹھ اضلاع میں بجلی کا سوئچ بند کرنے کا رواج ہی نہیں جس کی وجہ سے فیڈر ٹرپ کر جاتا ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...