وفاقی وزیر علی زیدی قومی احتساب بیورو پر برس پڑے ،ایسی بات کہہ دی کہ چیئرمین نیب بھی سوچ میں پڑ جائیں گے

وفاقی وزیر علی زیدی قومی احتساب بیورو پر برس پڑے ،ایسی بات کہہ دی کہ چیئرمین ...
وفاقی وزیر علی زیدی قومی احتساب بیورو پر برس پڑے ،ایسی بات کہہ دی کہ چیئرمین نیب بھی سوچ میں پڑ جائیں گے

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر برائے بحری اُمور علی زیدی نے کہا ہے کہ نیب پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ قومی احتساب بیورو (نیب) اگر جرم ثابت نہیں کر سکتا تو سیاست دانوں کو پکڑتا کیوں ہے ؟لوگ پکڑے جا رہے ہیں اور چھوٹ رہے ہیں جس کا ملبہ حکومت پر گر رہا ہے جس پر عمران خان اور کابینہ کو تشویش ہے۔

نجی ٹی وی’ہم نیوز‘کےپروگرام میں گفتگو کرتےہوئے وفاقی وزیر علی زیدی نے کہا کہ قومی احتساب بیورو (نیب) اگر جرم ثابت نہیں کر سکتا تو پکڑتا کیوں ہے ؟ لوگ اگر رہا ہو رہے ہیں تو اس کی ذمہ دار نیب ہی ہے،نیب کسی کو گرفتار کرتی ہے تو انہیں جرم بھی ثابت کرنا چاہیے اور ریفرنس پیش کرنا چاہیے،نیب کی غلطی پر سوال حکومت پر اٹھتے ہیں لیکن نیب حکومت کے کہنے پر گرفتاری نہیں کرتی جبکہ نیب چیئرمین پی ٹی آئی کی حکومت سے پہلے تعینات کیے گئے تھے۔انہوں نے کہا کہ کابینہ نے  مریم نواز کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے کی درخواست متفقہ طور پر مسترد کر دی ہے کیونکہ وہ ایک سزا یافتہ ہیں اور اُنہیں باہر کیوں جانے دیا جائے جبکہ نواز شریف کے بھی بیرون ملک 4 ہفتے پورے ہو گئے وہ بھی اب وطن واپس آ جائیں۔انہوں نے  رانا ثنا اللہ کی ضمانت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ رانا ثنا اللہ کا ابھی ٹرائل شروع نہیں ہوا ،اِنہیں ضمانت ملی ہے وہ بری نہیں ہوئے تاہم اُن کے بارے میں شہریار آفریدی ہی بہتر بتا سکتے ہیں۔

مزید : قومی