کھاد بحران،ڈیلرز کا ایکا،بلیک میں فروخت کا انکشاف

کھاد بحران،ڈیلرز کا ایکا،بلیک میں فروخت کا انکشاف

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 
چوک سرور شہید، کوٹ ادو، بارہ میل(تحصیل رپورٹر،سپیشل رپورٹر،نامہ نگار)ڈپٹی کمشنر کوٹ ادو کی ہدایت پر پرائس کنٹرول مجسٹریٹ محمد طلحہ شیخ اسسٹنٹ ڈائریکٹر زراعت فارم  نے امپورٹڈ یوریا سونا  یوریا، کیلشیم امونیم نائٹریٹ اور اینگرو یوریا غیر قانونی طور ذخیرہ اندوزی اور مہنگے داموں فروخت کرنے والے دوکانداروں محمد عمران کھاد فروش واقع بیٹ روڈ احسان پور، سید تنو(بقیہ نمبر39صفحہ6پر)
یر کھاد فروش واقع جھنگوی موڑ، اختیار خان کو پل ھزارہ پر، محمد صفدر کھاد ڈیلر پیر جگی موڑ پر واقع کھاد ڈیلرز کو موقع پر ہزاروں روپے کا جرمانہ عائد کیا اور دوکانات کو سیل کر دیا اس موقع پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر زراعت فارم گورنمنٹ سیڈ فارم احسان پور محمد طلحہ شیخ پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کوٹ ادو  نے کہا کہ حکومتی پالیسی کے تحت کسی کو بھی کھاد کی ذخیرہ اندوزی کی اجازت نہیں دی جائے گی اور کاشتکاروں کے مفاد کا بھر پور تحفظ کیا جائے گا۔ اس سلسلے میں کاشتکاروں سے بھی درخواست ہے کہ ایسے عناصر کی نشان دہی کریں تاکہ ان کے خلاف بلا امتیاز قانونی کارروائی کی جائے اور زمینداروں کو گورنمنٹ کے مقرر کردہ نرخ کے مطابق کھادوں کی دستیابی کو یقینی بنایا جا سکے،حکومتی سخت احکامات،ڈپٹی کمشنر کوٹ ادو کی ہدایت پر پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کے چھاپے،کھاد مہنگے داموں فروخت کرنیوالے 4ڈیلر دھرلیے،بھارے جرمانوں سمیت دوکانیں بھی سیل کردیں حکومتی پالیسی کے تحت کسی کو بھی کھاد کی ذخیرہ اندوزی کی اجازت نہیں دی جائے گی اور کاشتکاروں کے مفاد کا بھر پور تحفظ کیاجائیگا،اسسٹنٹ ڈائریکٹر زراعت محمد طلحہ شیخ،اس بارے تفصیل کے مطابق عوامی شکایات پرذخیرہ اندوزی اورکھادکی مہنگے داموں فروخت پر حکومت کے نوٹس پر ضلعی انتظامیہ متحرک ہو گئی ہے،ڈپٹی کمشنر کوٹ ادومحمد حسین رانا کی ہدایت پر ضلع بھر میں کریک ڈان شروع کردیا گیا،گزشتہ روزسپیشل کنٹرول پرائس مجسٹریٹ اسسٹنٹ ڈائریکٹر زراعت سیڈ فارم احسان پورمحمد طلحہ شیخ نیامپورٹڈ یوریاسونا،یوریا، کیلشیم امونیم نائٹریٹ اور اینگرو یوریا غیر قانونی طور ذخیرہ اندوزی اور مہنگے داموں فروخت کرنے والے دوکانداروں کے خلاف اپریشن کیااور احسان پورمحمدعمران،جھنگوی موڑپرکھاد ڈیلر سید تنویر،پل ھزارہ سے اختیار خان اورپیر جگی موڑپرکھاد ڈیلرمحمد صفدرسمیت تمام کو نوقع پر ہزاروں روپیجرمانہ عائد کیا اورانکی دوکانات کوسیل کردیاکبیروالا و نواحی علاقوں میں کھاد کا بحران بدستور جاری ہے اور کسان بلیک میں مہنگے ریٹس پر تاحال یوریا کھاد خریدنے پر مجبور ہے،ڈیلر حضرات کسانوں کو لوٹ کر کروڑ پتی بن گئے ہیں محکمہ زراعت کبیروالا کا افسر ڈاکٹر منظور گل بھی ڈیلروں کے ساتھ مل کر مبینہ طور پر یوریا کھاد بلیک میں مہنگے داموں فروخت کروا رہا ہے گذشتہ روز کھاد مافیا کے خلاف خبروں کی اشاعت پر محکمہ زراعت کبیروالا کے ملازمین کی غفلت والی آنکھیں کھل گئیں جس پر ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت کبیروالا ڈاکٹر منظور گل نے کبیروالا میں کچھ کھاد ڈیلروں کو فرضی جرمانے کیے،ڈیلروں نے بھی سر جوڑ لیے اور کبیروالا میں خفیہ جگہ پر با اعتماد ڈیلروں کی میٹنگ ہوئی جس میں کسانوں کو مزید اچھے طریقے سے لوٹنے کے فیصلے کیے گئے،باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ کھاد مافیا نے دیہی علاقوں میں خفیہ جگہوں پر کھاد سٹاک کر لی ہے