سوات موٹر وے متاثرین کا مٹہ چوک میں احتجاجی مظاہرہ، معاشی قتل بند کرنے کا مطالبہ 

  سوات موٹر وے متاثرین کا مٹہ چوک میں احتجاجی مظاہرہ، معاشی قتل بند کرنے کا ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


       مٹہ ( نمائندہ پاکستان) سوات موٹروے متاثرین کا مٹہ چوک میں احتجاجی مظاہر ہ  مظاہرے میں متاثرین کی بڑی تعداد نے شرکت کی  سوات موٹروے کی موجودہ نقشہ یہاں کی عوام کا معاشی قتل کی مترادف منصوبہ ہے جو کسی بھی صورت برداشت نہیں کی جائیگی زرعی زمینوں پر موٹر وے بناناظلم کی اخری حد ہے جس کی ہم پر زور مذمت کرتے ہیں موجودہ نقشے کی مطابق ہم سوات موٹروے بننے نہیں دینگے اس سلسلے میں کسی بھی قربانی سے دریغ بھی نہیں کرینگے  مظاہرے سے مقررین کا خطاب  تفصیلات کی مطابق گذشتہ روز متاثرین سوات موٹروے نے زرعی زمینوں پر موٹر وے بنانے کی خلاف مٹہ چوک میں ایک احتجاجی مظاہرہ کیا جس میں بڑی تعداد میں متاثرین نے شرکت کی مظاہرے سے دیگر قائدین کی علاوہ عوامی نیشنل پارٹی کے سابق ضلعی نائب ناظم عبدالجبار خان جماعت اسلامی کے سید اظہار اللہ فتح اللہ وکیل احمد  ظاہر شاہ  سجاد  بہادردر شیر افغان عبدالکریم  اورییحی خان نے بھی خطاب کی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ وہ سوات موٹر وے کی خلاف نہیں لیکن اس منصوبے کو زرعی زمینوں پر بنانے کی مخالف ہے انہوں نے کہا کہ جب بھی حکومت کوئی عوامی منصوبہ منظور کرتے ہیں تو اسکی مقصد اس علاقے کی ترقی اور عوام کی مفادات کو مدنظر رکھ کر منظور کی جاتی ہے لیکن سوات موٹروے اس وقت وہ منصوبہ منظور ہوچکا ہے جس میں علاقے کی ترقی اور مفادات کو پس پشت ڈال کر علاقے میں معاشی قتل کیلئے منظور کیا گیا ہے جو اس علاقے اور عوام کی ساتھ ظلم کی انتہا ہے انہوں نے کہا کہ عوام سوات موٹرے کو زرعی زمینوں پر بننے نہیں دینگے اور اس سلسلے میں اخری حد تک جائینگے اور کسی بھی قربانی سے دریغ بھی نہیں کرینگے انہوں نے حکومت اور دیگر ذمہ داروں سے مطالبہ کیا کہ سوات موٹر وے زرعی زمینوں کی بجائے دریائے سوات کی کناروں پر بنائے جس سے ایک طرف موٹر وے بھی بن جائیگی اور دوسری طرف یہاں کی غریب عوام کی زرعی زمینیں بھی ختم ہونے سے بچ جائیگی