صوابی میں قائم ڈائیلاسز یونٹ میں سہولت دینے کا سلسلہ جاری

 صوابی میں قائم ڈائیلاسز یونٹ میں سہولت دینے کا سلسلہ جاری

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


پشاور(سٹی رپورٹر)تدریسی ہسپتال باچاخان میڈیکل کمپلیکس صوابی میں قائم ڈائیلاسز یونٹ میں سہولت دینے کا سلسلہ جاری۔ رواں سال2022 میں مجموعی طور پر 9000سے زائد گردوں کے مریضوں کے ڈائلاسز کئے گئے۔ انتظامیہ کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ سال کی بہ نسبت رواں سال ڈائلاسز میں اضافہ ہوا ہے۔ سب سے زیادہ ایک ہی مہینے میں ڈائلاسز دسمبر کے مہینے میں 900سے زائد ریکارڈ کئے گئے۔ اعداد و شمار کے مطابق جنوری2022میں 600 جبکہ دسمبر میں یہ شرح 900سے بھی تجاوز کرگئی۔ اعداد و شمار کے مطابق روزانہ ڈائلاسز کی تعداد 35تک جا پہنچی ہے۔ ترجمان کے مطابق یہ تمام ڈائلاسز خیبرپختونخوا حکومت کے شروع کردہ صحت سہولت پروگرام کے تحت بلکل مفت کئے گئے ہیں۔انچارج ڈائیلاسز یونٹ ڈاکٹر طارق اکرام کے مطابق یونٹ کے ساتھ 350مریض رجسٹرڈ ہیں۔انہوں نے بتایا کہ یونٹ کے پاس مجموعی طور پرعالمی معیار کے مطابق 15ڈائیلاسز مشنینیں ہیں جن میں 13یونٹ کے اندرجبکہ 2مشینیں آئی سی یو میں نصب ہیں جہاں صبح 8بجے سے رات10بجے تک مریضوں کو سہولت دی جارہی ہے۔ا س کے علاوہ رواں سال مختلف وارڈز میں داخل اور ایمرجنسی میں 2000مریضوں کو ڈائیلاسز کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ایک ڈائلاسز یونٹ پر بین الاقوامی معیار کے مطابق چار گھنٹے لگتے ہیں۔اعداد و شمار کے مطابق یونٹ میں گردوں کے اُن مریضوں کو بھی سہولت دی گئی جو ہیپاٹائٹس بی اور سی میں مبتلا ہیں جس کی تعداد بالترتیب 400 اور 1930 ہے۔ہسپتال ڈائریکٹر ڈاکٹر امجد محبوب نے بتایا کہ یہ یونٹ سرکای سطح پر قائم بہترین ڈائیلاسز یونٹس میں سے ایک ہے۔ انہوں نے بتایا کہ یونٹ میں مریضوں کو بلا تفریق ڈائلاسز کی سہولت دی جاری ہے یہی وجہ ہے کہ دیگر اضلاع سے بھی یہاں مریضوں کو لایا جاتا ہے۔ترجمان باچاخان میڈیکل کمپلیکس کے مطابق صوابی میں گردوں کی مرض میں مبتلا مریض پہلے اسلام آباد، پشاور، مردان اور دیگر شہروں کو جاتے تھے مگر جب سے یہ یونٹ قائم ہوا ہے تو صوابی کے عوام کو انکی دہلیز پر ڈائیلاسز کی سہولت مئسر کی جارہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ باچاخان میڈیکل کمپلیکس کی پوری ٹیم یونٹ کو کامیابی سے چلانے کے لئے انہیں ہر قسم کی سہولت فراہم کررہی ہیں۔