(ن) لیگ کا سپیکر، ڈپٹی پنجاب اسمبلی کیخلاف تحریک عدم اعتماد واپس نہ لینے کافیصلہ 

  (ن) لیگ کا سپیکر، ڈپٹی پنجاب اسمبلی کیخلاف تحریک عدم اعتماد واپس نہ لینے ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


     لاہو(جنرل رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)مسلم لیگ ن نے سپیکر اور ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی کیخلاف تحریک عدم اعتماد واپس نہ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔یاد رہے کہ چند روز قبل عمران خان کی جانب سے پنجاب اور خیبر پختونخوا اسمبلیاں تحلیل کرنے کے اعلان کے بعد مسلم لیگ ن نے وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الٰہی کے علاوہ سپیکر پنجاب اسمبلی سبطین خان اور ڈپٹی سپیکر واثق عباسی کیخلاف تحریک عدم اعتماد جمع کروائی تھی۔دوسری جانب گورنر پنجاب بلیغ الرحمان نے وزیراعلیٰ چوہدری پرویز الٰہی کو اعتماد کا ووٹ لینے کا کہا تھا تاہم ان کی جانب سے اعتماد کا ووٹ نہ لیا گیا تو گزشتہ رات گورنر پنجاب نے وزیراعلیٰ کو ڈی نوٹیفائی کرنے کا اعلامیہ جاری کیا جبکہ سیکرٹری پنجاب نے پنجاب کابینہ کو تحلیل کرنے کا نوٹیفکیشن بھی جاری کیا۔تاہم اب ذرائع کا بتانا ہے کہ ن لیگ نے وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی کے خلاف تحریک عدم اعتماد واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ اسپیکر سطبین خان اور ڈپٹی اسپیکر واثق عباسی کے خلاف تحریک عدم اعتماد واپس نہیں لی جائے گی۔مسلم لیگ ن کے رکن پنجاب اسمبلی خلیل طاہر سندھو کا کہنا ہے پرویز الٰہی اعتماد کا ووٹ حاصل نہ کرنے پر پہلیہی عہدے سیہاتھ دھو  بیٹھے ہیں، صرف وزیراعلیٰ پنجاب کے خلاف تحریک عدم اعتماد واپس لی گئی ہے، اسیپکرپنجاب اسمبلی اور ڈپٹی اسیپکر کیخلاف تحریک عدم اعتماد موجود رہیگی۔ پاکستان مسلم لیگ ن نے وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی کے خلاف تحریک عدم اعتماد واپس لے لی۔مسلم لیگ ن کے رکن صوبائی اسمبلی خلیل طاہر سندھو نے کہا ہے کہ پرویز الٰہی اعتماد کا ووٹ حاصل نہ کر سکنے پر پہلے ہی عہدے سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں، صرف وزیراعلیٰ پنجاب کے خلاف جمع کرائی گئی تحریک عدم اعتماد واپس لی گئی ہے۔لیگی رکن اسمبلی کا مزید کہنا تھا کہ اسیپکر پنجاب اسمبلی اور ڈپٹی اسپیکر کے خلاف تحریک عدم اعتماد بدستور موجود رہے گی۔پرویز الٰہی کے خلاف جمع کرائی گئی تحریک عدم اعتماد واپس لینے کے وقت لیگی اراکین اسمبلی چیف وہپ خلیل طاہر سندھو، میاں مرغوب احمد، غزالی سلیم بٹ اور ذیشان رفیق موجود تھے
تحریک واپس۔

مزید :

صفحہ اول -