پیر مظہر الحق اپنے بیان سے مکر گئے ، متعصبانہ بیان سے صدمہ ہوا: الطاف حسین

پیر مظہر الحق اپنے بیان سے مکر گئے ، متعصبانہ بیان سے صدمہ ہوا: الطاف حسین
پیر مظہر الحق اپنے بیان سے مکر گئے ، متعصبانہ بیان سے صدمہ ہوا: الطاف حسین

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی،حیدرآباد(مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے کہاکہ متعصبانہ بیان سے صدمہ ہوا ، موقع ملا تو پاکستان کے ہر شہر میں یونیورسٹیاں بنائیں گے جبکہ دوسری طرف سندھ کے وزیرتعلیم پیر مظہر الحق یونیورسٹی نہ بننے دینے سے متعلق اپنے بیان سے مکر گئے ہیں ۔ مقامی میڈیا کے مطابق ایم کیو ایم حیدرآباد زونل کمیٹی کے ارکان سے ٹیلی فون پر پر بات چیت کرتے ہوئے الطاف حسین نے کہا کہ موقع ملا تو پاکستان کے ایک ایک شہر میں یونیورسٹیاں تعمیر کریں گے۔ حیدر آباد کے عوام اشتعال انگیز بیان کے خلاف پرامن رہیں، کارکنان احتجاج کے دوران سرکاری و نجی املاک کو نقصان ”نہ “پہنچائیں۔ الطاف حسین نے کہا کہ غریب و متوسط طبقہ کو تعلیم اور روزگار کی فراہمی ہمارے منشور کا حصہ ہے۔دوسری طرف جیونیوز کے مطابق سندھ کے وزیر تعلیم پیر مظہر الحق نے کہاہے کہ حیدرآباد میں اُنہوں نے یونیورسٹی نہیں بننے دی اور ایسی کسی بھی کوشش کے سامنے آہنی دیوار بنے رہے۔ میڈیا پر خبر آنے کے بعد وہ اپنے اس بیان سے مکر گئے۔ ان کی منطق تھی کہ بعض عناصر سندھ یونی ورسٹی کو تباہ اور بدنام کرنا چاہتے ہیں، اس موقع پر وزیراعظم نے کالج کے لیے پچاس کروڑ روپے کا اعلان کیا تو طلبا اور پروفیسرز نے پرجوش انداز میں کالج کو یونیورسٹی کا درجہ دینے کا مطالبہ بھی کردیا اور یہی وہ تاریخی لمحہ تھا جب اچانک پیر مظہرالحق نے مداخلت کی اور راجہ جی کے کان میں کچھ کہا جس کے بعد وزیراعظم نے تقریر کا رخ ہی موڑ دیا۔وضا حتی بیان میں پیر مظہر الحق کا کہنا تھا کہ حیدرآباد میں یونیورسٹی کے قیام کے خلاف کوئی بات نہیں کی،وہ سندھ بھر میں یونیورسٹیز کے قیام کے حا می ہیں۔