لشکر جھنگوی کے خلاف پنجاب حکومت نے جو ایکشن لیا وہ لولا لنگڑا تھا:رحمن ملک

لشکر جھنگوی کے خلاف پنجاب حکومت نے جو ایکشن لیا وہ لولا لنگڑا تھا:رحمن ملک
 لشکر جھنگوی کے خلاف پنجاب حکومت نے جو ایکشن لیا وہ لولا لنگڑا تھا:رحمن ملک

  

خانیوال(مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی وزیر داخلہ رحمن ملک نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف سارے صوبوں کو ایکشن لینا ہوگا، اگر حکومت پنجاب نے لشکر جھنگوی کے خلاف میرے لیٹرز پر عمل کیا ہوتاتو کوئٹہ میں اتنا بڑا سانحہ پیش نہ آتا۔جہانیاں میں پاسپورٹ آفس کا افتتاح کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے رحمن ملک نے کہا کہ اٹھارھویں ترمیم کے بعد لاءاینڈ آرڈر صوبائی حکومتوں کا کام ہے۔ میرا کام اطلاع دینا اب صوبے اس کے خلاف کارروائی نہ کریں تو وہ کیا کرسکتے ہیں۔ کوئٹہ میں ہزاری برادری پر حملے کی 4 دن پہلے اطلاع دے دی تھی۔ اگر وہ نہیں روک سکے تو اس میں کس کا قصور ہے۔ کوئٹہ سانحہ کی ذمہ داری خود لشکر جھنگوی نے قبول کی ہے۔ لشکر جھنگوی اور طالبان معصوم لوگوں کو مارتے ہیں، لشکر جھنگوی کے دو گروپ ہیں ایک ملک اسحاق کا اور ایک مولانا احمد لدھیانوی کا جو اہل سنت والجماعت کے نام سے دہشت گردی میں ملوث ہیں۔ لشکر جھنگوی کے خلاف پنجاب حکومت نے جو ایکشن لیا وہ لولا لنگڑا تھا۔

مزید :

خانیوال -