الحمراءآرٹس کونسل مےں دو روزہ لاہور لٹےری فےسٹول کا آغاز

الحمراءآرٹس کونسل مےں دو روزہ لاہور لٹےری فےسٹول کا آغاز

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                    لاہور )ایجوکیشن رپورٹر) لاہور میں منعقد ہونے والے2روزہ”لاہور لٹریری فیسٹیول “ کا آغاز الحمراءآرٹس کونسل لاہور میںہوگیا۔ فیسٹیول میں دنیا بھر سے کلچر، لٹریچر، تعلیم و تاریخ سے وابستہ دانشور، شاعر اور ادیبوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ جبکہ فیسٹیول کے پہلے روزمشہور ناول نگار و دانشورطارق علی نے ”سیاست اور کلچر“ کے عنوان پر گفتگو کرتے ہوئے ثقافت ، ادب ، سیاست و تاریخی و سماجی پہلو¶ں پر روشنی ڈالی -انہوں نے کہا کہ قوموں کی ترقی میں کلچر، لٹریچر اور تاریخ اہم کردار ادا کرتی ہے- جن قوموں کی تہذیب مضبوط ہوتی ہے وہ قومیں تیزی سے ترقی کرتی ہیں- انہوں نے کہا کہ مسلم دنیا بالخصوص پاکستان جیسے ملک کو ترقی کرنے کیلئے بنیادی اصولوں پر کام کرنا ہوگا- انتہا پسندی اور فرقہ واریت پاکستان کی ترقی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے- انہو ں نے کہا کہ سرمایہ دارانہ نظام کی اس گلوبل ورلڈ میں سامراجی قوتوں نے اپنے مخصوص مفادات کیلئے ہمیشہ دوسری قوموں کو اپنے دائرہ اختیار میں کرنے کی کوشش کی ہے لیکن جن قوموں کی تہذیب ، کلچر مضبوط ہوتا ہے وہ قومیں ایسے چُنگل میں نہیں آتیں- دنیا کے بیشتر ممالک کی مثالیں دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج کے دور میں چائنہ ایک کلیدی حیثیت رکھتا ہے - جس تیزی سے چائنہ نے ترقی کی ہے ساری دنیا کے لیے مثال ہے- انہوں نے کہا کہ کسی بھی ملک کی سیاست میں اس کی تہذیب و ثقافت اہم کردار ادا کرتی ہے، سیاست اور کلچر کا آپس میں گہرا تعلق ہے- فیسٹیول میں ادب ، تاریخ اور لٹریچر سے متعلق مختلف موضوعات پر شارٹ پلے اور دستاویزی فلموں کی نمائش کی گئی- فیسٹیول میں مختلف نمائشوں کا انعقاد بھی کیا گیا، شائقین کی بڑی تعداد نے فیسٹیول میںبڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔اس موقع پر اے پی این ایس کے سابق صدر حمید ہارون، پاکستان ٹوڈے کے چیف ایڈیٹر عارف نظامی، عطاءالحق قاسمی، کامل خان ممتاز، نسرین رحمن سمیت دیگر اہم شخصیات بھی موجود تھیں۔ جبکہ لٹریری میلے کے موقع پر مختلف اداروں، کمپنیوں اور ابلاغی گروپوں نے سٹال بھی لگائے۔ لاہور لٹریری فیسٹیول کو صوبائی محکمہ اطلاعات نے منعقد کروایا ہے۔
لٹریری فیسٹیول