چینی خاتون نے اپنی بیٹی کیلئے ’اینٹی کرونا وائرس ٹینٹ‘ بنادیا

چینی خاتون نے اپنی بیٹی کیلئے ’اینٹی کرونا وائرس ٹینٹ‘ بنادیا
چینی خاتون نے اپنی بیٹی کیلئے ’اینٹی کرونا وائرس ٹینٹ‘ بنادیا

  



ووہان (ڈیلی پاکستان آن لائن) چینی خاتون نے اپنی بیٹی کی پڑھائی کو یقینی بنانے اور اسے کرونا وائرس سے بچانے کیلئے اسے ’اینٹی کرونا وائرس‘ ٹینٹ بنا کر دے دیا ہے جس میں وہ آن لائن تعلیم حاصل کر رہی ہے، کرونا وائرس کی وجہ سے چینی حکومت نے ابھی تک سکول نہیں کھولے ہیں۔

کرونا وائرس کے مرکز ہوبائی صوبے میں خاتون نے اپنی بیٹی کا اینٹی کرونا وائرس ٹینٹ بنانے کیلئے پلاسٹک کی شیٹوں اور بانس کے ڈنڈوں کا سہارا لیا ہے۔ خیمہ گھر سے باہر بنایا گیا ہے جس میں بیٹھ کر 7 سالہ بی مینگ قی کلاسز لیتی ہے۔

گھر کے اندر انٹرنیٹ کی سپیڈ آہستہ تھی جبکہ گھر کے باہر انٹرنیٹ کی رفتار تیز آتی ہے جس کی وجہ سے بچی کو گھر کے باہر بیٹھ کر پڑھنا پڑتا ہے، اسی لیے اس کی والدہ نے اسے کرونا وائرس سے بچانے کیلئے اینٹی کرونا وائرس ٹینٹ بنایا ہے تاکہ بچی اس جان لیوا مرض کے حملے سے محفوظ رہے۔ نگرانی کیلئے خاتون خود بھی بچی کے ساتھ بیٹھتی ہے تاکہ وہ پڑھائی پر فوکس بھی کرے اور باہر کے جراثیم آلودہ ماحول سے بھی بچی رہے۔

حکومت کی جانب سے کرونا وائرس کی وجہ سے ابھی تک سکول بند رکھے گئے ہیں جس کی وجہ سے چین کے سکولوں نے بچوں کو آن لائن تعلیم دینا شروع کردی ہے، سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ بچی کے ساتھ اس کی والدہ بھی خیمے میں ہی بیٹھی ہوئی ہے ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس