پنجاب اسمبلی میں ایمرجنسی سروس ترمیمی بل پیش، راجہ بشارت کی مخالفت

پنجاب اسمبلی میں ایمرجنسی سروس ترمیمی بل پیش، راجہ بشارت کی مخالفت

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)پنجاب اسمبلی کا اجلاس 2 گھنٹے سنتالیس منٹ کی تاخیر سے سپیکر چودھری پرویز الٰہی کی صدارت میں شروع ہوا اجلاس میں محکمہ ہائر ایجوکیشن کے سوالوں کے جوابات دئے جانے تھے جو وزیر ہائر ایجوکیشن راجہ یاسر ہمایوں کی عدم موجودگی کے باعث موخر کردئے، اجلاس میں پرائیویٹ ممبر ڈے کے موقع پر رکن اسمبلی خدیجہ عمر کی جانب سے پنجاب ایمرجنسی سروس ترمیمی بل 2021 پر ایوان میں پیش کیا گیا،جس کی مخالفت وزیر قانون راجہ بشارت کی طرف سے کی گئی،ان کا کہنا تھا کہ ایمرجنسی سروس بل پر پہلے سے کام ہو رہا ہے۔جمعرات تک اس بل کو موخر کر دیا جائے۔سینٹ الیکشن کے بعد ملک کے کیا حالات ہونگے معلوم نہیں ہے۔مسلم لیگ ن کے رکن سمیع اللہ خان نے کہا کہ ممبر محنت سے ایوان میں بل لاتا ہے۔آج اس بل کو منظور کریں تاکہ ارکان کی حوصلہ افزائی ہو سکے۔ورنہ آئندہ ارکان ایوان میں بل نہیں لائیں۔پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے پارلیمانی لیڈر سید حسن مرتضی نے ایوان میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ضمنی انتخابات کی مہم کے دوران ہی حکومت گھبراہٹ کا شکار تھی کاروباری اور دیگر شخصیات کو ہراساں کیا جاتا رہا،پولنگ والے دن جو بربریت اور ظلم دیکھنے کو ملا وہ ہماری تاریخ کا سیاہ دن تھا۔موٹر سائیکل سوار سرعام فائرنگ کرتے رہے،الیکشن کمیشن نے جو ردعمل دیا وہ بھی افسوسناک تھا۔الیکشن کمیشن کی پریس ریلیز جو جاری ہوئی اس نے تمام خدشات کو درست قرار دیاہمیں توقع تھی کہ الیکشن کمیشن پریس ریلیز کی بجائے کوئی ایکشن لے گا۔لیکن ایسا نہ ہوسکا،الیکشن کمیشن کا عملہ غائب کیا گیا،جہاں سے عملہ غائب ہوا اسکا رزلٹ 85 فیصد آیا ہے جو کہ عام انتخابات میں بھی نہیں ہوتا۔پاکستان میں جہاں بھی الیکشن ہوئے ہیں وہاں پر حکومت کو عبرت ناک شکست ہوئی ہے،یہ قوم کا عدم اعتماد کا اظہار کر دیا ہے،کیونکہ قوم کہہ رہی ہے کہ چوروں کی حکومت میں چینی 50 روپے کلو،اب ایماندار کے دور میں 100 روپے کلو میں نہیں مل رہی۔ بے ایمان حکومت تھی تو ساٹھ روپے پیٹرول کی قیمت تھی۔آپ دعائیں دیں پرویز الہٰی کوجن کی وجہ سے عثمان بزدار وزیر اعلیٰ بنا، آج کہیں تو کل پرویز الہیٰ وزیر اعلی ٰبن جائیں، پی ٹی آئی حکومت کھڈے لائن لگ جائیگی۔ صوبائی وزیر جیل خانہ جات فیاض الحسن چوہان نے ایوان میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ سندھ اسمبلی میں حلیم عادل شیخ کے ساتھ چھ سات سال سے ظلم و زیادتی ہورہی ہے، شہبازشریف اور حمزہ شہباز جیل میں انجوائے کررہے ہیں جواب میں سید حسن مرتضیٰ نے کہا کہ فیاض الحسن چوہان کو گھبراہٹ فردوس عاشق کی ہے کیونکہ انہیں چوہان کی ری پلیسمنٹ دی گئی،ذوالفقار بھٹو اور آصف علی زرداری نے کوئی بی کلاس جیل میں نہیں مانگی۔

پنجاب اسمبلی

مزید :

صفحہ آخر -