سازش کے تحت ان کو سینیٹ الیکشن سے نااہل کیا گیا، ریحان عالم 

  سازش کے تحت ان کو سینیٹ الیکشن سے نااہل کیا گیا، ریحان عالم 

  

صوابی(بیورورپورٹ)سینیٹ الیکشن کے ٹیکنو کریٹ نشست کے لئے صوبہ خیبر پختونخوا سے پاکستان مسلم لیگ ن اور پی ڈی ایم کے مشترکہ نوجوان امیدوار ریحان عالم نے کہا ہے کہ ان کے پاس ملک اور بیرون ملک کے مختلف ملٹی نیشنل کمپنیوں میں مختلف شعبوں میں خدمات انجام دینے کے تجربات کے دستاویزات کے باوجود ان کو ایک سازش کے تحت سینیٹ الیکشن لڑنے کے لئے نا اہل قرار دیا لیکن وہ پارٹی اور پی ڈی ایم کی قیادت کے مشاورت سے اپنی آئینی اور قانونی جنگ لڑینگے ان خیالات کااظہار انہوں نے اپنے حجرے میں ایک ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ انہوں نے پاکستان میں پانچ چھ سال ملٹی نیشنل کمپنیوں کے علاوہ ناروے، دوبئی، تھائی لینڈ اور سنگا پور سمیت دیگر پانچ ممالک میں مختلف کمپنیوں میں مختلف شعبوں میں اکیس سال تک کام کیا۔اس حوالے سے وہ مختلف شعبوں میں تقریباً اکیس سال تک تجربہ رکھتے ہیں الیکشن کمیشن آف پاکستان کے رولزکے مطابق میں نے اکیس سالہ تجربات اور تعلیمی اسناد اور کوائف جمع کرائیں جانچ پڑتال کے روز میرے کاغذات اس بنیاد پر مسترد کر دیئے کہ ان کے تجربے کی معیاد کم ہے حالانکہ الیکشن رولز کے مطابق میرے تجربے کے کاغذات کی معیاد دو تین سال زائد تھی لیکن زیادہ تجربے کے باوجود کاغذا ت نامزدگی مسترد کرنا پی ڈی ایم کے خلاف حکومتی سازش ہے انہوں نے کہا کہ میں مسلم لیگ ن ضلع صوابی اور خاص کر صوبائی صدر انجینئر امیر مقام کا انتہائی مشکور ہوں جنہوں نے مجھے سینیٹ الیکشن لڑنے کے لئے پارٹی امیدوار نامزد کیاپارٹی نے مجھ پر جو اعتماد کیا ہے اس پر میں سب کا مشکور ہوں۔انہوں نے کہا کہ کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے بعد الیکشن ٹریبونل ہائی کورٹ میں نظر ثانی کے لئے درخواست دی لیکن الیکشن ٹریبونل نے بھی تجربے کو بنیاد بنا کر کاغذات نامزدگی مسترد کر دیئے اسی طرح پی ڈی ایم کے حاجی غلام علی کے صاحبزادے زبیر سمیت پی ڈی ایم کے تین امیدواروں کی جانب سے اپیلیں بھی مسترد کر دی گئی جب کہ حکومتی امیدواروں حامد الحق، دوست محمد خا ن و دیگر کے اپیلوں کی درخواستیں منظور کر کے انہیں اہل قرار دیا گیا حکومت پی ڈی ایم کے امیدواروں کو اس لئے نا اہل کر رہی ہے تاکہ ان کے امیدوار سینیٹ الیکشن میں کامیاب ہو سکے انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم کے امیدواروں کی کامیابی کے لئے اسی پلیٹ فارم سے ٹیکنو کریٹ اور خواتین نشستوں کے لئے فارمولہ طے کیا گیا تھا انہوں نے کہا کہ عمران خان یوتھ کو سیاست میں لانے کے لئے ترجیح دے رہے تھے مسلم لیگ ن کی قیادت نے جب نوجوانوں کو سیاسی میدان میں اتارا تو پی ٹی آئی نے اس کا راستہ روک لیا جب کہ سینیٹ الیکشن لڑنے کے لئے خود پی ٹی آئی نے ستر سال سے زائد عمر والے بوڑھوں کو نامزد کر دیا انہوں نے کہا کہ ہم ہمت ہار نے والے نہیں بلکہ اپنی جدوجہد جار ی رکھیں گے اور اس کے لئے بہتر منصوبہ بندی اور طریقہ کار وضع کرینگے۔ اس موقع پر مسلم لیگ ن ضلع صوابی کے جنرل سیکرٹری حاجی دلدار خان جو کہ ریحان عالم خان کے والد بھی ہے نے مسلم لیگ ن ضلع صوابی کے صدر حاجی شیراز خان، صوبائی نائب صدر سجاد خان، بابر سلیم سمیت تمام ضلعی قیادت اور خصوصاً انجینئر امیر مقام کا بھر پور انداز میں شکریہ ادا کیا جنہوں نے صوابی کے حقوق کی جنگ لڑنے کے لئے مسلم لیگ صوابی کو سینیٹ الیکشن میں نمائندگی کا موقع فراہم کرنے کے لئے اپنا بھر پور کر دار ادا کیا۔اس موقع پر ضلعی صدر حاجی محمد شیراز خان، سابق ایم پی اے بابر سلیم، ضلعی رہنما محمد علی اور دیگر رہنماؤں نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت صرف مسلم لیگ نہیں بلکہ پی ڈی ایم امیدواروں کو چن چن کر سینیٹ الیکشن لڑنے سے باہر کر رہی ہے جب کہ اسکی ایک مثال سابق سینیٹر پرویز رشید کے تجربے کے اسناد طلب کرنا بھی ہے پی ٹی آئی حکومت سینیٹ میں مسلم لیگ اور پی ڈی ایم کے موثر آواز کو دبانے کے لئے سینیٹ الیکشن میں اپوزیشن کے امیدواروں کو ناکام بنانے کے لئے ہر حربے استعمال کررہی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -