مارچ کو حکومت کیخلاف دمادم مست قلندر ہوگا، فیصل کریم کنڈی 

مارچ کو حکومت کیخلاف دمادم مست قلندر ہوگا، فیصل کریم کنڈی 

  

نوشہرہ(بیورورپورٹ) پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکرٹری اطلاعات فیصل کریم کنڈی  نے کہا ہے کے مارچ کو حکومت کے خلاف دمادم مست قلندر ہوگا مسنگ پرسن کا تو سنا تھا لیکن ڈسکہ ۔ الیکشن میں پولنگ عملہ کو غائب کر کے حکومت نے دھاندلی کی بدترین مثال قائم کردی پی ڈی ایم نے پاکستان بھر میں ضمنی  الیکشن میں کامیابی حاصل کرکے ناجائز اور سلیکٹڈ حکومت کے خلاف عوام  نے اپنا فیصلہ سنا دیا  سینٹ انتخابات کی پولنگ طریقہ کار میں آئین میں موجود ہے اگر حکومت اتنی ہی اپنے ممبران اسمبلی پر شک کر رہی ہے تو اس کیلئے ضروریہے کہ وہ پارلیمان میں دو تھائی اکثریت سے آئین میں ترمیم کریں لیکن وزیر اعظم عمران خان اور ان کے ممبران اسمبلی اتنے حواس باختہ ہو گئے ہیں کہ ایک طرف سپریم کورٹ گئے اور دوسری طرف پالیمان میں بل پاس کرنے کیلئے تحریک استحقاق جمع کی ہے  سند ھ، بلوچستان، نوشہرہ پی کے 63سمیت ملک کے ضمنی انتخابات عوام نے پاکستان کے موجودہ نااہل حکمرانوں کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے اور قوم نے ان کی عوام کش پالیسیاں مسترد کر دیں ہیں حکومت میں  ہوتے ہوئے وزیر اعظم ضمنی انتخابات میں دھاندلی کا رونا رو رہے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے  نام منتخب ایم پی اے اختیار ولی خان کی رہائش گاہ پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر پاکستان پیپلز پارٹی کے صوبائی صدر ہمایون خان لیاقت شباب اور دوسرے رہنما  بھی موجود تھے انہوں نے پی ڈی  ایم کے مشترکہ امیدوار اختیار ولی خان کو کامیابی پر دلی مبارکباد پیش کرتے ہیں   فیصل کریم کنڈی  نے مزید کہا۔  کے سینٹ الیکشن میں یوسف رضا گیلانی کامیابی حاصل کرکے ہم ان کو انشااللہ سینٹ کا چیئرمین بھی بنائیں گے یوسف رضا گیلانی پی ڈی ایم کے مشترکہ امیدوار ہیں وہ تمام پارٹیاں ان کو کامیاب کرنے کے لئے اپنی بھرپور کوششیں کر رہی ہیں ہم اپنے تمام ہم خیال جماعتوں کے ساتھ رابطے میں ہیں وفاقی وزیر دفاع پرویز خٹک کی طرف سے پی کے 63 میں دھاندلی  پر انہوں نے کہا کے 2018 کے الیکشن میں سلیکٹروں کی مدد سے الیکشن جیتنے والے آج دھاندلی کا رونا رو کر اپنی شکست کا غم مٹانے کی کوشش کر رہے ہیں سلیکٹر کے مدد کے بغیر الیکشن میں تحریک انصاف کو عبرتناک شکست سے دوچار ہونا پڑا آج بھی عمران خان حکومت بغیر سلیکٹر کے الیکشن میں اپوزیشن کا مقابلہ نہیں کر سکتی نوشہرہ کے عوام نے پرویز خٹک کی سیاست کو مسترد کر دیا ہے  دھاندلی تو حکمرانوں نے کی ہے اورملک بھر کے ضمنی انتخابات میں عوامی رائے کی بولیاں لگانے کی ناکام کوشش کی گئی لیکن قوم اب باشعور ہے ہو چکے ہیں اور حکمران جماعت کو نوشہرہ پی کے 63سمیت پورے ملک میں عبرتناک شکست دے کرکے یہ ثابت کر دیا ہے کہ قوم پی ٹی آئی کی ناکام پالیسیوں سے متنفر ہو چکی ہے انہوں نے مزید کہا کہ پوری دنیا میں کورونا سے لوگ مر رہے تھے لیکن پی ٹی آئی کے ممبران اسمبلی اپنے ترقیاتی فنڈز کو سیاسی رشوت کے طور پر خرچ کرنے میں لگے ہوئے تھے انہوں نے کہا کہ ملک انتہائی نازک دور سے گزر رہا ہے اور ملکی تاریخ میں پہلی بار پاکستان آئینی، مالی، انتظامی بحرانوں کا شکار بنا ہوا ہے اور یہ سے ثابت ہو گیا ہے کہ عمران خان اور نکی ہپوری ٹیم مکمل طور پر ناکام ہے قوم نے دوسال انتظار کیا اب قوم مزید انتظار کی متحمل نہیں کیونکہ موجودہ نااہلوں نے قوم کا جینا محال کرکے رکھ دیا ہے پی ڈی ایم کی جدوجہد رنگ لے آئی اور قوم نے پی ڈی ایم کے اعلامیے کو اپنا فیصلہ قرار دیتے دیا انہوں نے کہا کہ سینٹ تک حکومت مہمان ہو گی اس کے بعد نااہل، سلیکٹیڈ کا بوریا بستر گو ل ہو گا۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -