ڈیرہ: 7 افراد قتل‘ آر پی او کا جائے وقوعہ کا معائنہ‘ زخمیوں کی عیادت 

      ڈیرہ: 7 افراد قتل‘ آر پی او کا جائے وقوعہ کا معائنہ‘ زخمیوں کی عیادت 

  

قصبہ کالا(نمائندہ پاکستان) انتہا پسند جنونی کے ہاتھوں 7 بے گناہ افراد کے قتل کے حوالے سے آر پی او فیصل رانا نے جائے وقوعہ کا معائنہ کیا،،مقتولین کے ورثا  سے اظہار تعزیت اور زخمیوں کی عیادت کی،ایک مقتول کے کم۔سن بیٹے سے پیار کرتے ہوئے آر پی او  (بقیہ نمبر58صفحہ 7پر)

آبدیدہ ہو گئے، ماحول جذباتی ہو گیا، دیہاتیوں کے مطالبے پر ڈی پی او کو پولیس پکٹ لگانے اور فوری طور پر موبائل گاڑی فراہم کرنے کا حکم دیدیا۔ تفصیلات کے مطابق کچھ روز قبل تھانہ صدر شاہ دین کے علاقہ میں ایک انتہاپسند جنونی کی بلاجواز فائرنگ  کا نشانہ بن کر جاں بحق ہونے والے 7 افراد کے ورثا سے اظہار تعزیت کے لئے ریجنل پولیس آفیسر ڈی آئی جی محمد فیصل رانا گئے انہوں نے مقتولین کے ورثا سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ انتہا پسند جنونی کے ہاتھوں 7 افراد کا قتل اور متعدد افراد کے زخمی ہونے کا واقعہ معاشرتی ناہمواریوں کے حوالے سے ایک انتہائی غیر معمولی واقعہ ہے،جس کے تمام پہلووں پر پولیس کے ساتھ ساتھ معاشرے کے با اثر طبقات کو بھی غور کرنا ہو گا،ہمیں اجتماعی کوششوں سے ان عوامل اور وجوہات کا تدارک کرنا ہو گا جو اس نوعیت کی دہشت گردی نما واقعات کے پھیلاو کا سبب بنتے ہیں،انہوں نے کہا کہ جو افراد انتہا پسند جنونی کی فائرنگ کا نشانہ بن کر قتل ہوئے وہ تو واپس نہیں آئیں گے لیکن پولیس کی بر وقت کارروائی نے علاقے کو بڑے بدترین نقصان سے بچا لیا،اگرچہ مقتولین کے حوالے سے 7 کا فگر بھی کوئی کم نہیں لیکن اگر پولیس بروقت رسپانس نہ کرتی تو یہ فگر کہیں زیادہ بڑھ سکتا تھا۔انہوں نے کہا کہ بدبخت انتہا پسند خود بھی ہلاک ہو گیا اس کی وائرل ہو نے والی ویڈیوز  اسکی جنونیت کو اشکار کر رہی ہیں وہ ایک مخصوص مائنڈ سیٹ کا حامل شخص تھا جس کی ذہنیت انتہا پسندی کی آخری حدوں کو بھی عبور کر چکی تھی،،آر پی او فیصل رانا  نے کہا کہ پولیس کی طرف سے ایک،،فیکٹ فائنڈنگ،،کمیٹی اس اندوہناک واقعہ کے بظاہر اور چھپے ہوئے عوامل کو تلاش کر رہی ہے جن کے سامنے آنے کے بعد ان کے سدباب کے لئے قانونی اقدامات اٹھائے جائیں گے،،آر پی او کی طرف سے مقتولین کے ورثا کے ساتھ تعزیت  کر رہے تھے کہ ان۔کے سامنے ایک مقتول منظور لاشاری  کا کم سن بیٹا آیا،آر پی او نے اسے پیار کیا اور خود آبدیدہ ہو گئے جس سے ماحول خاصا غمگین ہو گیا،،آر پی او نے ہسپتال جا کر زخمیوں کی عیادت کرتے ہوئے ان کو علاج کی بہترین سہولیات فراہم کرنے کی ہدایات دیں،،اس موقع پر دیہاتیوں نے جائے وقوعہ کے قریب پولیس پکٹ لگانے اور چوکی کے قیام کا مطالبہ کیا،آر پی او فیصل رانا  نے دیہاتیوں کے مطالبے پر ڈی پی او ڈی جی خان کو حکم دیا کہ پولیس پکٹ لگا کر فوری طور پر پولیس گاڑی فراہم کی جائے،انہوں نے کہا کہ پولیس چوکی کے قیام کے لئے اعلی پولیس حکام۔کو تحریری خط لکھا جائے گا قانونی تقاضے پورے ہونے کے بعد جتنی جلدی ممکن ہوا پولیس چوکی قائم۔کر دی جائے گی،انہوں نے مقتولین اور زخمیوں کے لئے حکومتی امداد کے حوالے سے معاونت کی یقین دہانی بھی کروائی۔

عیادت

مزید :

ملتان صفحہ آخر -