مظفر گڑھ: اے ایس آئی پراسرار طور پر  لاپتہ‘ 5 دن بعد حاضر‘ انکوائری شروع

مظفر گڑھ: اے ایس آئی پراسرار طور پر  لاپتہ‘ 5 دن بعد حاضر‘ انکوائری شروع

  

 مظفرگڑھ (نامہ نگار) تھانہ روہیلانوالی کے 5 دن پراسرار طور پر  لاپتہ رہنے والے اے ایس آئی محمد ظفر حسین  نے ڈرامائی (بقیہ نمبر25صفحہ 6پر)

طور پر  خود مظفرگڑھ پولیس میں رپورٹ کردی ہے پولیس ترجمان کے مطابق اے ایس آئی کو کلوز لائن کر کے ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر سعد اللہ خان کو انکوائری افسر مقرر کردیا گیا ہے وہ اس معاملے پر اس کے ازخود غائب ہونے یا کوئی اور وقوعہ کی تحقیق کر کے اپنی رپورٹ دینگے، جسکے بعد مزید قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی یاد رہے کہ تھانہ روہیلانوالی کا اے ایس آئی ظفر حسین اغوا برائے تاوان کے ملزمان کی تلاش میں صوبہ سندھ گیا تھا جہاں سے آخری مرتبہ  17 فروری کو اس نے اپنی زندگی خطرے میں ہونے کا پیغام دیا اور اس کے بعد اس کا موبائل فون بند ہو گیا اور مظفرگڑھ پولیس اور اہلخانہ کے ساتھ اس کا رابطہ گزشتہ روز شام تک منقطع رہا اس کے اہلخانہ اور محکمہ پولیس انتہائی پریشانی کا شکار ہو گئے محکمہ پولیس  مظفرگڑھ نے اس کی تلاش میں پولیس پارٹی بھی  روانہ کی جو اسے سندھ میں تلاش کرتی رہی لیکن ڈرامائی طور پر گزشتہ شب اس نے خود حاضر ہو کر سب کو حیران کر دیا ہے ڈی پی او نے اسے لائن حاضر کرکے ڈی ایس پی سعداللہ خان کو انکوائری آفیسر مقرر کرکے معاملہ کی چھان بین کا حکم دیا ہے۔

لاپتہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -