کورونا کے پھیلاؤ کی شرح میں کمی کے بعد سپین کی حکومت نے اہم فیصلہ کرلیا

کورونا کے پھیلاؤ کی شرح میں کمی کے بعد سپین کی حکومت نے اہم فیصلہ کرلیا
کورونا کے پھیلاؤ کی شرح میں کمی کے بعد سپین کی حکومت نے اہم فیصلہ کرلیا
سورس:   Pixabay

  

میڈرڈ (ارشد نذیر ساحل ) سپین میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی شرح کم ہونے پر حکومت کی جانب سے پابندیوں میں نرمی کا اعلان کردیا۔

تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی شرح ایک لاکھ باشندوں میں 900 سے 321 پر آگئی ہے جس کے بعد متعدد صوبائی حکومتوں نے کورونا وائرس کے حوالے سے عائد  پابندیوں میں نرمی کا اعلان کردیاہے۔ وفاقی حکومت نے خطرے کی انتہائی حد 250 مقرر کررکھی ہے۔

میڈرڈ میں کورونا کی مثبت شرح ایک لاکھ باشندوں میں 427 پر ہے تاہم مقامی حکومت نے نقل و حرکت کی پابندی ختم کردی ہے۔کینری جزیرے میں چھ سے زائد افراد کو اکٹھے بیٹھنے کی اجازت دے دی گئی ہے  جبکہ کارنیوال کے حوالے سے متعدد اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔

کاتالونیا میں سکول کے بچوں کو کھیل کود کی اجازت دے دی گئی ہے تاہم کورونا پابندیوں کو 28 فروری تک برقرار رکھاگیاہے۔  وزیر صحت نے کہاہے کہ اگر وائرس کے پھیلاؤ کی شرح میں کمی کا سلسلہ جاری رہا تو پابندیوں میں نرمی کی جائے گی۔ اندولوسیا کی حکومت نے بھی فروی کے آخر میں پابندیوں میں نرمی کا امکان ظاہر کیاہے۔

ویلنسیا کی صوبائی حکومت نے ایک لاکھ باشندوں میں کورونا کے پھیلاؤ کی شرح 1200 سے کم ہو کر 358 پر آنے کے بعد پابندیوں میں نرمی کا عندیہ دیاہے۔

مزید :

کورونا وائرس -