مخصوص نشستوں کا معاملہ، سنی اتحاد پرخطرے کی تلوار، آئندہ ہفتے تک فیصلہ نہ ہواتونشستیں دیگر جماعتوں کو جائیں گی، ذرائع کادعویٰ

مخصوص نشستوں کا معاملہ، سنی اتحاد پرخطرے کی تلوار، آئندہ ہفتے تک فیصلہ نہ ...
مخصوص نشستوں کا معاملہ، سنی اتحاد پرخطرے کی تلوار، آئندہ ہفتے تک فیصلہ نہ ہواتونشستیں دیگر جماعتوں کو جائیں گی، ذرائع کادعویٰ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن ) مقامی میڈیا کے ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ   پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ ارکان کی شمولیت کے بعد مخصوص نشستوں کےلئے سنی اتحاد کی درخواست پر آئندہ ہفتے تک فیصلہ نہ ہوا تو نشستیں باقی جماعتوں میں بانٹ دی جائیں گی،مخصوص نشستوں کےلئے پی ٹی آئی ارکان کی سنی اتحاد کونسل میں شمولیت کے بعد سے پانچوں اسمبلیوں میں حلف برداری کا عمل جمعہ سے شروع ہوگیا ہے۔

"جیونیوز" کے مطابق الیکشن کمیشن کے ترجمان نے" دی نیوز" کو بتایا ہے کہ کمیشن نے ایس آئی سی کے قانونی ونگ سے درخواست کی ہے کہ وہ پروسیسنگ شروع کرے، اس مقصد کےلئے کمیشن کو تاحال یہ فیصلہ کرنا ہے کہ آیا اسمبلیوں میں مخصوص نشستوں کے حوالے سے سنی اتحاد کونسل کو اسمبلی کی نشستیں دینا ہیں یا نہیں۔بالفرض کمیشن درخواست مان لیتا ہے تو اس سے سنی اتحاد کونسل کی عددی طاقت پانچوں اسمبلیوں میں بڑھ جائے گی لیکن قومی اسمبلی اور تین دیگر صوبائی اسمبلیوں میں اس کا اقلیتی سٹیٹس تبدیل نہیں ہوگا۔
ایک اور اہم پیشرفت یہ ہوئی ہے کہ الیکشن کمیشن میں 26 فروری کو ایک اہم اجلاس بلایا گیا ہے جس میں قانونی ونگ کے نتائج کی روشنی میں معاملات کا فیصلہ کیا جائےگا۔