عدلیہ میں اصلاحات کے منصوبے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے، ترک وزیر اعظم

عدلیہ میں اصلاحات کے منصوبے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے، ترک وزیر اعظم

برسلز (آئی اےن پی )ترک وزیر اعظم رجب طیب اردون نے کہا ہے کہ وہ ملکی عدلیہ میں اصلاحات کے اپنے منصوبے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ غےر ملکی مےڈےا کےمطابق پریس کانفرنس کے دوران ترک وزےراعظم نے کہا کہ یورپی یونین کے تحفظات کی وجہ سے وہ ملکی عدلیہ میں اصلاحات کے اپنے مجوزہ منصوبے کو ترک نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ وہ ملک کی اعلیٰ عدلیہ سپریم بورڈ آف ججز اینڈ پراسیکیوٹرز میں شفافیت پیدا کرنے کے لیے اپنے منصوبے کو عملی جامہ ضرور پہنائیں گے۔ ترک وزیر اعظم نے کہا کہ عدلیہ کو اپنے مشن اور منڈینٹ سے باہر نہیں جانا چاہیے۔ اردون کا مزید کہنا تھا یہ وہ کام ہے جو ہم کر رہے ہیں اس کے علاوہ جو کچھ ہے وہ غلط بیانی اور مسخ شدہ حقائق پر مبنی ہے۔

 انہوں نے اس حوالے سے مزید کہا ہمارے یورپی دوستو نے کچھ تجاویز پیش کی ہیں جنہیں ہم ضرور توجہ دیں گے۔ ترکی نے یورپی یونین کا رکن ملک بننے کی خاطر 1959ء میں کوشش شروع کی تھی تاہم اس حوالے سے باضابطہ مذاکرات کا آغاز 2005ء میں شروع ہوا تھا۔ یہ عمل بھی تین برس کے تعطل کے بعد گذشتہ برس ہی بحال ہوا ہے۔

مزید : عالمی منظر