جنرل وی کے سنگھ قانون ساز کونسل کی کمےٹی کے سامنے پےش نہیں ہوئے

جنرل وی کے سنگھ قانون ساز کونسل کی کمےٹی کے سامنے پےش نہیں ہوئے

جموں (کے پی آئی) بھارت کے سابق آرمی چےف جنرل وی کے سنگھ دوسری مرتبہ بھی جموں و کشمےر قانون ساز کونسل کی کمےٹی کے سامنے پےش ہونے مےں ناکام رہے ۔ جنرل وی کے سنگھ سے کمےٹی مےں پےش ہونے کے لےے کہا گےا تھا جنہوں نے اےک ٹی وی انٹروےو کے دوران الزام لگاےا تھا کہ فوج نے جموں و کشمےر کے سےاست دانوں کو رقم ادا کی ہے ۔ سابق فوجی سربراہ کو اسمبلی مےں پےش ہونے اور اپنے بےان پر وضاحت کرنے کا ارادہ ظاہر کرتے ہوئے اسمبلی کے ترجمان نے کہا کہ سابق فوجی سربراہ کو پرولےج کمےٹی کے سامنے حاضر ہونا ہی پڑے گا اور اس سلسلے مےں جو افواہےں پھےلائی جارہی ہےں وہ بے بنےاد ہےں ۔ جموںو کشمےر اسمبلی کے اسپےکر مبارک گل نے سابق فوجی سربراہ رےٹائرڈ جنرل وی کے سنگھ کو اسمبلی کی پرولےج کمےٹی کے سامنے حاضر ہونے کی تصدےق کرتے ہوئے کہا کہ سابق فوجی سربراہ کوہرحال مےں پرولےج کمےٹی کے سامنے حاضر ہونا پڑے گا ۔ اسمبلی کے ترجمان اور سپےشل سےکرٹری اےن آر سنگھ نے تصدےق کرتے ہوئے کہاکہ پرولےج کمےٹی پر پندرہ وزراءاور ممبران اسمبلی نے اعتماد کا اظہار کےا ہے اور اسمبلی نے متفقہ طور پر سابق فوجی سربراہ کو پرولےج کمےٹی کے سامنے پےش ہونے پر رضامندی ظاہر کی لہذا سابق فوجی سربراہ کو ہر حال مےں پرولےج کمےٹی کے سامنے حاضر ہونا پڑے گا سپےشل سےکرٹری کے مطابق سابق فوجی سربراہ کو پرولےج کمےٹی کے سامنے حاضر ہونے ےا اس معاملے کو رفع دفع کرنے کا سوال ہی پےدا نہےں ہوتا ہے اور اس سلسلے مےں جو افواہےں پھےلائی جا رہی ہےں ان کا حقےقےت کے ساتھ دور کا بھی واسطہ نہےں ہے ۔

مزید : عالمی منظر