میانمار میں مسلمانوں کیلئے جینا دوبھر ہوگیا، بودھو ں نے مزید درجنوں افراد ماردیئے

میانمار میں مسلمانوں کیلئے جینا دوبھر ہوگیا، بودھو ں نے مزید درجنوں افراد ...
میانمار میں مسلمانوں کیلئے جینا دوبھر ہوگیا، بودھو ں نے مزید درجنوں افراد ماردیئے

  

نیویارک،رنگون (مانیٹرنگ ڈیسک) میانمارمیں بودھو ں نے مسلمانوں کا جینا دوبھر کردیاہے اور رواں ماہ کے آغاز میں ہی کم از کم 40 مسلمانوں کو موت کے گھاٹ اتاردیاگیاجبکہ قبل ازیں بنگلہ دیش فرار ہونے کی کوشش میں خواتین اور بچوں سمیت 70مسلمانوں کو مار دیا گیا تھا ۔ اقوام متحدہ نے حکومت سے امدادی کارکنان کو متاثرہ علاقوں میں پہنچنے کے لیے سیکیورٹی فراہم کرنے اور غیرجانبدارانہ تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاہے کہ متاثرہ علاقوں میں وسیع پیمانے پر ہلاکتوں کا خدشہ ہے ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ اس ماہ کے آغاز میں بدھ مذہب کے ایک گروہ کے ہاتھوں مغربی میانمار کے گاو¿ں میں 48 مسلمان مارے گئے ہیں، میانمار حکومت اس واقعے کا نوٹس لے اور فوری اور غیرجانبدارانہ تحقیقات کراتے ہوئے سخت کارروائی کرے۔ اقوام متحدہ کے ادارہ برائے انسانی حقوق کے مطابق مصدقہ اطلاعات ہیں کہ روہنگیا میں مختلف مواقعوں پر نہ صرف مسلمانوں کو قتل کیا گیا بلکہ انہیں اغوا کیا گیا اور ان پر تشدد بھی ہوا۔ بی بی سی کے مطابق برما کی ریاست رخائن میں چند دنوں کے دوران بدھوں کے حملوں میں 30 سے زائد مسلمانوں کو قتل کیا جا چکا ہے۔ فسادات اس وقت شروع ہوئے جب یہ خبر پھیلی کہ متعدد مسلمانوں کو بنگلہ دیش کی سرحد پر فرار ہونے کی کوشش میں قتل کیا گیا ہے اور مقامی بودھو ں نے سیکیورٹی فورسز کی مدد سے ایک گائوں میں بدلے کی کاروائی میں حصہ لیا۔ادھر میانمار کے صدارتی ترجمان نے مسلمانوں کے قتل عام سے متعلق خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسلمانوں کے قتل عام سے متعلق اقوام متحدہ کے پیش کئے گئے اعداد و شمار بالکل غلط ہیں۔



مزید : بین الاقوامی