پاک چین ثقافتی خلا ء پر کرنے کیلئے ادیب ،دانشور آگے آئیں،ایس ایم نوید

پاک چین ثقافتی خلا ء پر کرنے کیلئے ادیب ،دانشور آگے آئیں،ایس ایم نوید

لاہور(کامرس رپورٹر)پاک چین جوائینٹ چیمبر آف کامرس ایند انڈسٹری کے صدر ایس ایم نوید نے کہا ہے کہ پاکستان اور چین کے درمیان ثقافتی خلا ء کو پر کرنے کیلئے ادیبوں اور دانشوروں کو آگے بڑھنا چاہیے۔ یہ بات انہوں نے پاک چین جوائینٹ چیمبر میں معروف رائٹر حسنین نازش کے تحریر کردہ سفرنامہ ’’دیوار چین کے سائے تلے ‘‘ چائینہ‘کی تعریفی تقریب سے خطاب کر تے ہوئے کہی۔ اس موقع پر پاک چین جوائینٹ چیمبر کے سینئر نائب صدر ڈاکٹر اقبال قریشی، نائب صدر رانا محمود اقبال اور کتاب کے مصنف حسنین نازش بھی موجود تھے جبکہ تقریب میں چیمبر کے سابق صدر وانگ زہائی، معظم گھرکی اور صلاح الدین حنیف سمیت صنعت و حرفت کے شعبوں کی متعدد نمایاں شخصیات نے بھی شرکت کی۔پاک چین جوائینٹ چیمبر کے صدر ایس ایم نوید نے اپنے خطاب کے دوران کہا کہ انہوں نے متذکرہ سفر نامے کا بغور مطالعہ کیا ہے اور اسے پاکستان اور چین کے معاشرتی اور ثقافتی تعلقات کے فروغ کیلئے بے حد مفید پایا ہے انہوں نے کہا کہ وہ پاکستان اور چین کو قریب لانے والی ہر کوشش کو سراہتے رہیں گے ۔ کیونکہ اس وقت دونوں ممالک دو طرفہ تعلقات کے تاریخی دور میں داخل ہو رہے ہیں جس کے مثبت اثرات آنے والی کئی نسلوں پر مرتب رہیں گے ۔ لہٰذاہ اس وقت ہمیں سرمایہ کاری اور تجارت کے ساتھ ساتھ دوطرفہ حقائق پر مبنی ایسے ادب کی بھی ضرورت ہے جو دونوں ملکو ں کے عوام کو ایک دوسرے کی ثقافتی اور معاشری روایات کو سمجھنے میں مدد دے سکے۔انہو ں نے کہا کہ اس اہم فریضے کیلئے پاکستان کے ادیبوں اور دانشوروں کو آگے بڑھ کر اپنا کردار انجام دینا چاہیے۔پاکستان اور چین میں یکساں مقبول بزنسمین اور پاک چین جوائینٹ چیمبر کے سابق صد مسٹر وانگ زہائی نے بھی ایک موثر اور معلومات افزاء سفرنامہ تحریرکرنے پر حسنین نازش کی تعریف کی اور کہا کہ سفر نامہ پڑھتے ہوئے یوں لگتا ہے جیسے ہم خود اس سفر میں انکے ہمسفر ہیں اور انہوں نے چینی ثقافت اور معاشرتی روایات کی بہترین انداز میں عکاسی کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ سفر نامہ پڑھ کر بحیثیت چینی باشندہ میرے دل میں پاکستان کی دوستی پر فخر کے جذبات پید ا ہوئے ہیں اور یقناََ یہ کتاب پڑھ کر میری طرح سبھی چینی عوام میں پاکستانی عوام کی محبت اور احترم پیدا ہوگا۔ انہوں نے تجویز دی کہ اس سفر نامہ کا ترجمہ چینی زبا ن میں بھی کیا جائے۔اس موقع پر سفرنامے کے مصنف حسنین نازش نے انکے سفرنامہ کے حوالے سے تقریب کے انعقاد پر پاک چین جوائینٹ چیمبر کے صدر ایس ایم نوید کا خصوصی طور پر شکریہ ادا کیا اور کہا کہ درحقیقت انہوں نے یہ سفرنامہ چین کے عوام کی اس محبت کے اعتراف میں لکھا ہے جو وہ پاکستان کے عوام سے کرتے ہیں۔اور سفر نامے کو میں نے چینی عوام کے نام منسوب کیا ہے جو پاکستان کی معاشی اور معاشرتی خوشحالی کے نہ صرف دل سے متمنی ہیں بلکہ اس کیلئے ہر سطح پر کوششیں بھی بروئے کار لا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اور چین کے عوام کے درمیان بہادری، ذہانت ، محنت اور وفاداری کی روایات بڑی حد تک مساوی درجے پر ہیں۔جو دو قوموں کی دیر پا اور تاریخ ساز دوستی کیلئے مظبوط بنیاد ثابت ہوتی ہیں۔ اور میں نے اپنے سفر نامے میں ان روایات کو دل سے محسوس کر کے قلم بند کیا ہے۔

مزید : کامرس