کوٹ ادو‘ ماہر تعلیم کو اغوا ء برائے تاوان کی دھمکیاں دینے والے 4 ملزم گرفتار

کوٹ ادو‘ ماہر تعلیم کو اغوا ء برائے تاوان کی دھمکیاں دینے والے 4 ملزم گرفتار

کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر) معروف ماہر تعلیم سے موبائل فون پر بیٹااٹھانے کی دھمکیاں دیکر5لاکھ تاوان وصول کرتے ہوئے4بھتہ خور رنگے ہاتھوں گرفتار کر لیے گئے تفصیل کے مطابق وارڈنمبر13کوٹ ادو کے رہائشی نیم تعلیمی سرکاری اداروں کے مالک وپرنسپل رانا محمد جمیل جس کا(بقیہ نمبر20صفحہ12پر )

اکلوتا بیٹا 14سالہ محمد عبداللہ اور5بیٹیاں ہیں کومختلف موبائل نمبرزسے دھمکی آویزکالیں آتی رہیں جن میں فون کرنے والے مجاہد اقبال سپل نے مجھے میری جائیداد اور اولاد کی تفصیل دی اورمجھے دھمکی دی کہ آپ کے اکلوتے بیٹے اور بیٹیوں کے مدرسہ اور سکول کے آنے جانے کے اوقات کا انہیں پتہ ہے اگر اپنی اولاد پیاری ہے تو 5لاکھ روپے کا بندوبست کرو،کئی روز تک موبائل پر فون کرکے دھمکیاں دیتا رہااور مختلف جگہ پر ملنے کا کہتا رہاپھر گزشتہ روزکوٹ ادو کے مقامی ہوٹل آغوش میرج ہال کے سامنے بلایا جسکی اطلاع پرنسپل رانا محمد جمیل نے پولیس کو دی،مقررہ ٹائم پر بھتہ خور آغوش میرج ہال کے سامنے 2موٹر سائیکلوں پر سوارہو کر آگئے اور پلان کے مطابق شاپر میں تاوان کی رقم 5لاکھ روپے وصول کی، اسی اثناء میں پولیس کوٹ ادو نے جوکہ پہلے سے سول کپڑوں میں ملبوس ہوکر چھپی ہوئی تھی نے انہیں دھر لیا،گرفتار بھتہ خوروں کی شناخت مجاہد عباس سپل،ارسلان ہاشمی راؤ بیلہ غربی موضع جانگلہ کے 2بھائی گلزار عباس گورمانی،اقرار عباس گورمانی سے ہوئی ،اور پولیس نے تاوان کی رقم سمیت انہیں گرفتار کرلیا ،گرفتار ہونے والوں میں ایک ملزم مجاہد عباس سپل جوکہ پولیس ملازم ہے پولیس کوٹ ادو نے چاروں بھتہ خوروں کے خلاف مقدمہ نمبر38/18زیر دفعہ386-506بی کے تحت درج کرکے تفتیش شروع کردی ،دریں اثناء گرفتار بھتہ خوروں کے بارے علم ہوا ہے کہ ان میں موضع جانگلہ کے 2بھائی گلزار عباس گورمانی جو کہ حساس ادارے کا ملازم ہے ،اقرار عباس گورمانی سمیت جعلی صحافی ارسلان ہاشمی اورمجاہد عباس پولیس ملازم معلوم ہوا ہے اور ان چاروں بھتہ خوروں کا تعلق تحصیل کوٹ ادو سے ہے۔

گرفتار

مزید : ملتان صفحہ آخر