پولیس کی ناقص تفتیش ، اہم مقدبمات کے فیصلوں میں سالہاسال سے تاخیر

پولیس کی ناقص تفتیش ، اہم مقدبمات کے فیصلوں میں سالہاسال سے تاخیر

لاہور(نامہ نگار )پولیس کی ناقص تفتیش اور مقدمات کے بروقت چالان پیش نہ کرنے کے باعث لاہور ڈویژن کی انسداد دہشت گردی کی عدالتوں میں سانحہ ماڈل ٹاؤن اورسانحہ یوحناآ باد سمیت دیگراہم مقدمات کے سالہاسال سے فیصلے نہ ہوسکے ۔انسداد دہشت گردی کی عدالت میں سانحہ ماڈل ٹاؤن استغاثہ کیس تقریبا 3سال سے زیر سماعت ہے جبکہ یوحنا آباد میں دو افراد کو زندہ جلائے جانے والے ملزمان بھی 2سال گزرنے کے باجود کیفرکردار تک نہیں پہنچ سکے ہیں۔انسداد دہشت گردی کی عدالت میں واہگہ بارڈر پر خودکش حملے کا کیس بھی التوا ء کا شکار ہے جبکہ قصور میں بچوں سے بداخلاقی کا کیس انسداد دہشت گردی کی عدالت نمبر 4 میں دو سال سے زیر سماعت ہیں۔ماہر قانون مدثر چودھری ،مجتبیٰ چودھری اور مرزاحسیب اسامہ کا کہنا ہے کہ پولیس کی جانب سے ناقص تفتیش اور مقدمات کا بروقت چالان پیش نہ کرنے سے مقدمات التوا ء کا شکار ہوتے ہیں، انسداد دہشت گردی کی عدالتوں میں کیسز کو جلد نمٹانے کے لئے عدالتوں کی تعداد کو بھی بڑھانا چاہیے۔

مزید : علاقائی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...