تقررنامہ کے باوجود نابینا شخص کو نوکری نہ دینے کیخلاف درخواست پر سی سی پی اولاہور کو فیصلہ کاحکم

تقررنامہ کے باوجود نابینا شخص کو نوکری نہ دینے کیخلاف درخواست پر سی سی پی ...

لاہور(نامہ نگارخصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے تقررنامہ کے باوجود نابینا شخص کو نوکری نہ دینے کے خلاف درخواست پر سی سی پی او لاہور کو موقف سن کر 10روز میں فیصلہ کرنے کاحکم دے دیا ہے۔مسٹر جسٹس جواد حسن نے محمد نواز کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ پنجاب پولیس میں باورچی کی نوکری کے لئے درخواست دی تھی اور تمام کاغذی کارروائیا ں مکمل کرنے کے بعدمحکمہ نے نوکری کا لیٹر بھی جاری کر رکھاہے لیکن اس کے باوجود نوکری نہیں دی جا رہی، درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ مخصوص کوٹہ پر نوکری دینے سے متعلق سی سی پی او لاہور کو متعدد بار درخواستیں بھی دی جا چکی ہیں مگر کوئی داد رسی نہیں کی جا رہی ،سی سی پی او لاہور کو درخواست پر فیصلہ کرنے کاحکم دیا جائے، عدالت نے ابتدائی سماعت کے بعد تقررنامہ کے باوجود نابینا شخص کو نوکری نہ دینے کے خلاف درخواست پر سی سی پی لاہور کو موقف سن کر 10روز میں فیصلہ کرنے کاحکم دے دیا ہے۔

مزید : صفحہ آخر