نقیب اللہ کیس میں کسی کا دفاع نہیں کیا جائے گا: سہیل انور سیال

نقیب اللہ کیس میں کسی کا دفاع نہیں کیا جائے گا: سہیل انور سیال

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک ) صو بائی وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال کا کہنا ہے نقیب اللہ کیس میں کوئی کتنا بھی با اثر ہو اس کا دفاع نہیں کیا جائے گا۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نقیب اللہ کیس کی ایف آئی آر درج ہوگی جس کے بعد باقاعدہ تفتیش کا آغاز ہوگا، تحقیقاتی کمیٹی کے کام سے مطمئن ہوں، راؤ انوار کو کسی پر اعتراض ہے تو وہ آئی جی کیسامنے پیش ہوں، کوئی ثبوت ہے تو پیش کریں اور خود کو بے گناہ ثابت کریں۔ کسی سے تعلق کا مقصد ’لائسنس ٹو کِل‘ نہیں، ہم کسی کی پشت پناہی نہیں کررہے اور نہ کریں گے ۔سہیل انور سیال نے مزید کہا کہ مقصود، نقیب اور انتظار کیسں کے حالات مختلف ہیں، میڈیا تینوں چیزوں کو اکٹھا کررہاہے جب کہ تینوں کیس الگ الگ سمت میں چل رہے ہیں، تینوں مقدمات کی بھرپور تفتیش کی جائے گی۔دریں اثناء شاہ لطیف ٹاؤن پولیس مقابلے میں 13 جنوری کو نقیب اللہ محسود کے ساتھ مارے گئے دیگر 3 ملزمان کی ہلاکت کی بھی تحقیقات کا آغاز کردیا گیا۔نقیب اللہ محسود قتل کیس کی تحقیقاتی کمیٹی میں شامل ڈی آئی جی ایسٹ سلطان خواجہ نے تینوں ملزمان کے کرمنل ریکارڈ کے لیے چاروں صوبوں، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے آئی جیز کو خط لکھ دیے جبکہ سندھ کے ڈی آئی جیز کو بھی معلومات دینے کا کہا گیا ہے۔

نقیب کیس

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...