اپوزیشن کے پاس کوئی پروگرام نہیں ، ن لیگ ہمیشہ اداروں پر دباؤ ڈالتی ہے : سیاسی رہنما

اپوزیشن کے پاس کوئی پروگرام نہیں ، ن لیگ ہمیشہ اداروں پر دباؤ ڈالتی ہے : ...

اسلام آباد (آئی این پی) مسلم لیگ (ن) کے رہنما چوہدری تنویر نے کہا ہے کہ (ن) لیگ میں کوئی دھڑے بازی نہیں، اپوزیشن کے پاس سوائے دھرنوں کے کوئی پروگرام نہیں جو یہ عوام کو دے سکے، اگر نواز شریف آج بھی چاہیں تو خیبرپختونخوا اسمبلی میں عدم اعتماد کی تحریک کامیاب ہو سکتی ہے۔ ان خیالات کا ظہار انہوں نے پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سابق وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا امیرحیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ عمران خان کو اپنے بیان پر معذرت کرنی چاہیے تھی، جس پارلیمنٹ کے ذریعے آپ وزیراعظم بننا چاہتے ہیں اسی پر لعنت بھیجتے ہیں، شیخ رشید کو کسی مشورے کی ضرورت نہیں وہ تو دو سروں کو مشورہ دیتے ہیں، ان کا پارلیمنٹ کے بارے میں بیان قابل افسوس ہے۔ ان خیالا ت کااظہار انہوں نے بھی پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔علاوہ ازیں پا رلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ (ق) کے رہنما سینیٹر کامل علی آغا نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن)کا ہمیشہ رویہ رہاہے کہ وہ اداروں پر دباؤ ڈالتی ہے، سپریم کورٹ پر بھی انہوں نے حملہ کیا، عدلیہ اور فوج پر اس طرح تنقید نہیں کی جا سکتی، عدلیہ اچھے طریقے سے کام کر رہی ہے۔وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور محسن شاہ نواز رانجھا نے کہا ہے کہ عوام شیخ رشید کو سیاست میں مسخرے سے بھی زیادہ نہیں لیتی، شیخ رشید کے اپنے معاملات پر انگلیاں اٹھ رہی ہیں، عمران خان کی باتوں کو سنجیدگی سے نہیں لینا چاہیے وہ اپنی باتوں سے پھر جاتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئیکیا۔دریں اثنا ء قومی وطن پارٹی کے سربراہ آفتاب خان شیرپاؤ نے کہا ہے کہ حیران ہوں کہ سندھ حکومت نے راؤ انوار کے خلاف ایکشن کیوں نہیں لیا، پوری سندھ حکومت بے بس نظر آتی ہے، پہلی بار دیکھا ہے کہ ایک پولیس آفیسر کمیٹی کے سامنے پیش نہیں ہورہا۔ پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ اسمبلی میں کورم پورا کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے۔

سیاسی رہنما

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...