عمران نیازی 24گھنٹے جھوٹ بولتا ، یہ آپ کے ووٹ کا حقدار نہیں : وزیر اعلٰی پنجاب

عمران نیازی 24گھنٹے جھوٹ بولتا ، یہ آپ کے ووٹ کا حقدار نہیں : وزیر اعلٰی پنجاب

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے لیہ کا دورہ کیااور وہاں اربوں روپے کے ترقیاتی منصوبوں کا افتتاح اورکئی ایک نئی سکیموں کا سنگ بنیاد رکھا۔وزیراعلیٰ نے لیہ میں ایک یونیورسٹی اورایک ٹیکنیکل کالج کے قیام کا بھی اعلان کیا ۔وزیراعلیٰ نے لیہ، چوبارہ اورچوک اعظم کو ماڈل سٹی بنانے کے لئے 30،30کروڑ روپے کے خصوصی فنڈ کا بھی اعلان کیا ۔نیشنل ہیلتھ کار ڈ پروگرام کے تحت لیہ کے 1 لاکھ37ہزار افراد کیلئے صحت کارڈ پروگرام کے اجراء اورلیہ کیلئے چار موبائل ہیلتھ یونٹس پراجیکٹ کا بھی افتتاح کیا۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے میلاد چوک لیہ میں ایک بڑے عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی 70سالہ تاریخ میں پہلی بار لیہ کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں جدید سی ٹی سکین مشین نصب کی گئی ہے جس سے مریضوں کو 24گھنٹے سی ٹی سکین کی سہولت بالکل مفت ملے گی،اسی طرح لیہ کیلئے موبائل ہسپتال بھی فراہم کیے گئے ہیں جو دوردراز علاقوں کے عوام کو جدید اورمعیاری علاج و تشخیص کی سہولتیں ان کی دہلیز پر فراہم کریں گے۔اب لیہ کے عوام کو سی ٹی سکین اورعلاج کیلئے لاہور،ملتان یا سرگودھا نہیں جانا پڑے گا ۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ عمران خان دن رات جھوٹ بولتا ہے جب پشاورمیں ڈینگی آیا تو پشاور کے عوام کی مدد کرنے کی بجائے و ہ نتھیا گلی کے پہاڑوں پر چڑھ گیا ،لاہور میں ڈینگی آیا تو اس نے مذاق اڑایا اورہمیں ڈینگی برادران کا طعنہ دیاجبکہ پشاور میں ڈینگی حملہ آور ہوا تو ہم نے پنجاب سے ڈاکٹرز ،نرسیں،پیرا میڈیکل سٹاف ،موبائل ہسپتال اوربہترین ادویات بھجوائیں۔نیازی صاحب جھوٹ بولنے کے عادی ہیں اورانہوں نے کے پی کے میں ایک ارب درخت لگانے کا بھی جھوٹ بولا۔ میں آپ سے پوچھتا ہوں کہ ایسا شخص جو 24گھنٹے جھوٹ بولے کیا وہ آپ کے ووٹ کا حقدار ہے؟اسی لیڈر نے کہا تھا کہ میں کے پی کے میں بجلی کے اندھیرے دور کروں گا اور پورے پاکستان کیلئے بجلی پیدا کروں گا لیکن ساڑھے چار سال گزرگئے اوریہ اپنے صوبے میں ایک کلو واٹ بجلی پیدا نہیں کرسکا۔دوسری جانب زرداری صاحب ہے جو کہتے ہیں کہ میں شریف خاندان کی کرپشن کا حساب لینے آیا ہوں۔خدا کی قدرت دیکھیں کہ ایک ایسا شخص جو سر سے لیکر پاؤں تک کرپشن میں ڈوبا ہوا ہے وہ کرپشن کا معمار بھی ہے وہ کہہ رہا ہے کہ میں کرپشن کا حساب لینے آیا ہوں ،تو پھریہ قیامت نہیں تو اور کیا ہے ۔سندھ میں زرداری اوراس کی ٹیم نے کرپشن کے سواکچھ نہ کیا ۔ وزیراعلیٰ نے لیہ میں گنے کے کاشتکاروں کی شکایات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ یہاں جو گنے کی ملیں موجود ہیں وہ کاشتکاروں سے زیادتی نہ کریں اگروہ اس سے بعض نہ آئیں تومل مالکان کوجیلوں میں بند کردیا جائے گا۔پہلے ہی کاشتکاروں کی حق تلفی کرنے والی شوگر ملوں کے مینجرزجیلوں میں بند کردےئے گئے ہیں ان میں میرے ایک عزیز کی بھی مل شامل ہے۔مجھے اپنے رشتے داروں کی کوئی پرواہ نہیں ،مجھے اگر پرواہ ہے تو غریب کسانوں کی، میں چھوٹے کاشتکاروں اور غریب کسانوں کو ان کا حق دلانے کیلئے آخری حد تک جاؤں گا۔میں شوگر مل مالکان کو بتانا چاہتا ہوں کہ وہ بندے بن جائیں۔ 72گھنٹے میں کئی ملوں کے مینجرز گرفتار ہوگئے ہیں۔میں کاشتکاروں کیلئے لڑوں گا اورانہی کیلئے مروں گااورکسی کو ظلم نہیں کرنے دوں گا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے ملتان میں میٹروبسیں چلائیں ،اسی طرح لودھراں میں سپیڈو بسیں چل رہی ہیں۔اگراللہ تعالیٰ نے دوبارہ عوام کی خدمت کا موقع دیا تو لیہ میں بھی سپیڈو بسیں چلائیں گے۔وزیراعلیٰ نے ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال لیہ میں چلڈرن وارڈ کا افتتاح کیا۔لیہ کے ضلعی ہسپتال میں سٹیٹ آف دی آرٹ چلڈرن وارڈ ساڑھے دس کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر کیا گیا ہے۔وزیراعلیٰ نے ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال لیہ کیلئے سی ٹی سکین مشین پراجیکٹ کا افتتاح بھی کیا اورانہوں نے لیہ کیلئے چار موبائل ہیلتھ یونٹ پراجیکٹ کا افتتاح کیا۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے لیہ کیلئے 75 ایمبولینسز اور 4 ہاسپٹل ویسٹ مینجمنٹ وہیکلز کی چابیاں مقامی انتظامیہ کے سپرد کردیں۔وزیراعلیٰ نے نیشنل ہیلتھ کارڈ پروگرام کے تحت لیہ کے ایک لاکھ 37 ہزار افراد کیلئے صحت کارڈ پروگرام کا باقاعدہ افتتاح کیااوراس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب سمیت ملک بھر میں لاکھوں خاندان ہیلتھ انشورنس سکیم سے مستفید ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب اپنے وسائل سے مزید 13 اضلاع میں ہیلتھ انشورنس سکیم متعارف کرا رہی ہے۔ ہیلتھ کارڈ کے ذریعے رجسٹرڈ خاندان 50 ہزار روپے تک روز مرہ علاج معالجہ کرا سکتے ہیں جبکہ پیچیدہ بیماری کی صورت میں ہیلتھ انشورنس کی رقم 3 لاکھ روپے تک بڑھائی جاسکتی ہے۔ وزیراعلیٰ نے لیہ تا چوک اعظم دو رویہ سڑک کا سنگ بنیاد رکھا۔اس دورویہ سڑک کی تعمیر پر 3 ارب 97 کروڑ روپے لاگت آئے گی اوراس کا پہلا مرحلہ جون میں مکمل کرلیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ لیہ چوک اعظم روڈ کی تعمیر سے شہروں اور دیہات کے لاکھوں مکینوں کو آمد و رفت میں سہولت ہوگی۔ وزیراعلیٰ نے لیہ کیلئے 30 کروڑ روپے کی لاگت سے نکاسی آب کے میگاپراجیکٹ ،نالہ لالہ ہیڈریگولیٹری کے منصوبے اوربیٹ مونگڑ سے بھکر تک 29 کلومیٹر طویل بند اور 5 سپرز پراجیکٹ کا سنگ بنیاد رکھا۔وزیراعلیٰ نے بیٹ گجی اور سمرا نشیب میں سپربند کی تعمیر کے منصوبے کا سنگ بنیاد بھی رکھا۔صوبائی وزراء خواجہ سلمان رفیق،مہر اعجاز احمد اچلانہ،ضلع لیہ کے قومی و صوبائی اسمبلی اورلوگوں کی بڑی تعداد نے جلسہ میں شرکت کی۔

شہباز شریف

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف سے سینیٹر الیاس بلور کی سربراہی میں صنعتکاروں کے نمائندہ وفدنے ملاقات کی جس میں صنعتی برادری کے مسائل کے حل اور شعبہ صنعت کو فروغ دینے کے حوالے سے بات چیت کی گئی۔ صنعتکاروں کے وفد کی جانب سے صوبہ پنجاب کے عوام کی ترقی اور خوشحالی کے لئے بے مثال اقدامات پر وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کو خراج تحسین پیش کیا گیا۔ وفد کے ارکان نے وزیراعلیٰ شہبازشریف سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آپ کی قیادت میں لاہور سمیت پنجاب بھر میں شاندار کام ہوا ہے اور اب تو پشاور کے لوگ بھی کہتے ہیں کہ ہمیں شہبازشریف جیسا وزیراعلیٰ چاہیئے۔ آپ نے اپنی محنت سے لاہور سمیت پنجاب کو ایک ترقی یافتہ صوبہ بنایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پشاور میں ساڑھے چار برس بعد میٹرو بس کا منصوبہ شروع کیا گیا ہے اور اگر یہ لوگ دھرنے نہ دیتے اور عوام کی خدمت کرتے تو کے پی کے بھی پنجاب کی طرح ترقی کرتا۔وفد نے مسائل کے حل کی یقین دہانی پر وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کا شکریہ ادا کیا اور انہیں پشاور کے دورے کی دعوت دی۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے غضنفر بلور کو فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا صدر منتخب ہونے پر مبارکباد دی۔ انہوں نے کہا کہ روزگار کی فراہمی میں صنعتی ترقی کلیدی کردار ادا کرتی ہے۔ صنعت کا پہیہ چلے گا تو روزگار کے زیادہ سے زیادہ مواقع پیدا ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ صنعتکاروں کے مسائل کے حل کیلئے وفاق سے بات چیت کروں گا اور برآمدات کے فروغ کے حوالے سے بھی صنعتی برادری کو درپیش مسائل حل کئے جائیں گے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ پنجاب میں شفافیت اور تیز رفتاری سے ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل ہمارا طرہ امتیاز ہے اور میں عوام کی خدمت کے لئے ہر وقت حاضر ہوں۔ میں نے ساڑھے چار برس کے دوران صوبے کے عوام کی بے لوث خدمت کی ہے اور میری خواہش ہے کہ پنجاب کی طرح دیگر صوبے بھی تیز رفتاری سے ترقی کریں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان ہم سب کا سانجھا ملک ہے اور ہم نے مل کر اس کی ترقی و خوشحالی کیلئے کام کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ چاروں صوبوں کے مل کر ترقی کرنے سے ہی پاکستان خوشحال ہوگا۔ وفد میں فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر غضنفر بلور، سابق صدر ایس ایم منیر، کے پی سی سی آئی کے سابق صدور حاجی محمد افضل، ریاض ارشد، ملک نیاز اور کے پی سی سی آئی کی ایگزیکٹو کمیٹی کے ممبر خان گل شامل تھے۔

وزیراعلیٰ پنجاب

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...