’میں اپنے بوائے فرینڈ کو سرپرائز دینے اس کے گھر گئی تو دیکھا اس کے کمرے میں یہ لڑکی لیٹی ہوئی ہے، میں نے فوراً۔۔۔‘ نوجوان لڑکی نے انٹرنیٹ پر ایسی بات لکھ دی کہ طوفان آگیا

’میں اپنے بوائے فرینڈ کو سرپرائز دینے اس کے گھر گئی تو دیکھا اس کے کمرے میں ...
’میں اپنے بوائے فرینڈ کو سرپرائز دینے اس کے گھر گئی تو دیکھا اس کے کمرے میں یہ لڑکی لیٹی ہوئی ہے، میں نے فوراً۔۔۔‘ نوجوان لڑکی نے انٹرنیٹ پر ایسی بات لکھ دی کہ طوفان آگیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نیویارک(نیوز ڈیسک) شریک حیات کی بے وفائی کا انکشاف یقیناً بہت بڑا صدمہ ہوتا ہے جو کسی کی بھی زندگی کو تہہ و بالا کر سکتا ہے۔ ایسے میں لوگوں کا کیا ردعمل ہوتا ہے، اس کا انحصار اپنی اپنی فطرت اور مزاج پر ہوتا ہے۔ ایک ایسے ہی صدمے سے دوچار ہونے والی ایک امریکی لڑکی نے سوشل میڈیا پر اپنا عجیب و غریب تجربہ بیان کیا ہے، جس پر ہر کوئی حیران رہ گیا ہے۔

ویب سائٹ ریڈٹ پر اس لڑکی نے یہ واقعہ بیان کرتے ہوئے بتایا ”میں ایک روز علی الصبح اپنے بوائے فرینڈ کے گھر پہنچی تا کہ اسے ناشتے کا سرپرائز دے سکوں اور میں اس کی پسندیدہ گیم بھی لے کر گئی تھی۔ جب میں اس کے کمرے میں داخل ہوئی تو وہ بیڈ پر برہنہ حالت میں سویا ہوا تھا اور اس کی بانہوں میں ایک لڑکی بھی اسی حالت میں لپٹی ہوئی سو رہی تھی۔ وہ اس کی سابق محبوبہ تھی۔ میں نے کبھی خواب میں بھی نہیں سوچا تھا کہ میری آنکھوں کو یہ منظر دیکھناپڑے گا۔ میں نے ناشتہ، گیم اور اپنے بوائے فرینڈ کے فلیٹ کی چابی وہاں میز پر رکھی اور خاموشی سے واپس چلی آئی۔

میں نے اپنے گھر واپس آ کر اپنا فیس بک اکاﺅنٹ ڈی ایکٹیویٹ کیا اور تمام دیگر سوشل میڈیا اکاﺅنٹس پر بھی اسے بلاک کر دیا۔ پھر نے اپنا فون نمبر تبدیل کیا اور دوسرے شہر کے لئے روانہ ہو گئی۔ میں نے وہاں نئی نوکری تلاش کی اور اپنی پچھلی زندگی سے تعلق پوری طرح ختم کر دیا۔

میرا دل بہت دکھی تھا لہٰذا میں نے فیصلہ کیا کہ اسے کبھی یہ موقع نہیں ملنا چاہئیے کہ میرے ردعمل کی کوئی وضاحت طلب کر سکے۔ میں نے خود کو اس کی زندگی سے مکمل طور پر غائب کر دیا۔ میں محسوس کرتی ہوں کہ ایسا کر کے نا صرف میرا اپنا دل مطمئن ہوا بلکہ مجھے یقین ہے کہ اسے بھی ہمیشہ یہ بات تکلیف دیتی رہے گی کہ میں کس طرح اچانک اس کی زندگی سے غائب ہو گئی۔ شاید کسی بھی اور طرح میں اسے اس کی بے وفائی کا اتنا گہرا احساس نہیں دلوا سکتی تھی۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس