نمونیہ کیا ہے ؟علامات واسباب

نمونیہ کیا ہے ؟علامات واسباب

  

نمونیہ پھیپھڑوں کی سوزش کو کہا جاتا ہے۔ یہ سوزش خاص طور پر پھیپھڑوں میں موجود ہوا کی تھیلیاں، جنہیں "Alveoli" کہا جاتا ہے، کو متاثر کرتی ہے۔یہ ایک متعددی مرض ہے۔ اس مرض میں کبھی صرف ایک پھیپھڑا متاثر ہوتا ہے اور کبھی دونوں۔ اور سوزش اکثر پھیپھڑوں کے صرف نچلے حصے میں ہوتی ہے، لیکن کبھی کبھار سارا پھیپھڑا بھی سوزش میں مبتلا ہو جاتا ہے۔

نمونیہ کے تین درجے ہوتے ہیں

اول درجہ میں پھیپھڑے سوزش کا شکار ہو کر جلد شفاء پا جاتے ہیں، اس کو نمونیہ کی عام حالت کہا جاتا ہے۔دوم میں اگر جلدی شفاء نہ ہو تو سوزشی مادہ ایلو یولائی میں جمع ہو کر پھیپھڑے کی ساخت کو متاثر کرتا ہے، پھیپھڑوں کی ساخت جگر کی مانند ہو جاتی ہے اور ہوا کا گزر پھیپھڑوں میں نہیں ہوپاتا،اس درجے کو Hepatization کہتے ہیں۔ اگر اس درجے میں مرض کو دور کر دیا جائے تو سوزش دور ہو کر پھیپھڑے اپنی اصلی حالت میں آجاتے ہیں۔

جبکہ تیسرے درجے میں مرض دور نہ ہونے کے سبب پھیپھڑے گل کر مردہ ہو جاتے ہیں۔

نمونیہ کی علامات

تیز بخار کا ہونا، سردی لگنا، بھوک کی کمی یا ختم ہونا، جلد کی رنگت کا نیلا پڑ جانا، بلڈ پریشر کا کم ہونا، بلغمی کھانسی کا آنا، سانس کی رفتار کا تیز ہونا، سانس لینے میں دشواری ہونا، سینے میں درد (یہ درد عموماً پسلیوں اور بغل کے پاس پایا جاتا ہے)، دل کی رفتار کا تیز ہونا، متلی و قے آنا، پورے جسم کا درد ہونا شامل ہے۔

نمونیہ کے اسباب

بیکٹیریا، وائرسز اور دیگر خوردبینی اجسام نمونیہ کا سبب بنتے ہیں۔

*۔۔۔ اس کے علاوہ سخت محنت اور تھکان کے ساتھ سردی شامل ہو جائے تو یہ نمونیہ کا سبب بن جاتی ہے۔ جب سردی دیر تک اپنا حملہ کرتی رہے اور قوت زیست کمزور کر دے تو یہ مرض پیدا ہو جاتا ہے۔

*۔۔۔ بھیگے ہوئے کپڑے دیر تک پہنے رکھنا یا نمدار زمین پر عرصہ تک بیٹھے رہنا یا سرد ہوا میں گھنٹوں کھڑے رہنا یا چلنا پھرنا یہ سب بھی نمونیہ کے اسباب ہیں۔

*۔۔۔ لڑکے جب کھیلتے کھیلتے تھک جاتے ہیں اور سرد گھاس پر لیٹ جاتے ہیں یا فوراً کپڑے اتار کر ٹھنڈی ہوا لیتے ہیں۔ بعض اوقات ایسا کرنے سے ان کو یہ مرض لاحق ہو جاتا ہے، کیونکہ سرد ہوا جب تھکے ماندے جسم پر حملہ کرتی ہے تو پھیپھڑوں میں ورم پیدا کر دیتی ہے۔

*۔۔۔ اس کے علاوہ جسمانی و مکانی غلاظت بھی اس مرض کے بڑھنے میں مددگار ثابت ہوتی ہے۔ بعض دوسرے امراض بھی نمونیہ کا سبب بنتے ہیں جیسے خسرہ، چیچک، انفلوئزا، امراض قلب سوزش گردہ وغیرہ۔

وہ لوگ جو نمونیہ سے جلد متاثر ہوتے ہیں

بہت سے دوسرے عام لوگوں کی نسبت جو لوگ جلد نمونیہ کا شکار ہو جاتے ہیں ان میں یہ لوگ شامل ہیں جو:

*۔۔۔ سگریٹ و شراب نوش ہوتے ہیں۔

*۔۔۔ ایک سال سے کم اور 65 سال سے بڑی عمر کے لوگ۔

*۔۔۔ کمزور یا خراب مدافعتی نظام کے حامل افراد۔

*۔۔۔ Malnourished لوگ۔

*۔۔۔ کچھ دوسری بیماریوں میں مبتلا افراد جیسے دمہ، ایڈز کے مریض وغیرہ۔

*۔۔۔ وہ لوگ جو خاص قسم کے کیمیکلز اور آلودگی کا زیادہ سامنا کرتے ہوں۔

(بشکریہ: ماہنامہ ’’چشم بیدار، لاہور)

مزید :

ایڈیشن 1 -