ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کریک ڈاؤن کیا جائے،طاہر محمود اشرفی

ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کریک ڈاؤن کیا جائے،طاہر محمود اشرفی

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)پاکستان علماء کونسل کی قیادت نے کہا ہے کہ آٹا بحران اور خورو نوش کی بڑھتی ہوئی قیمتوں پر قابو پانے کیلئے گورننس کے معاملات میں فوری طور پر بہتری لانا ہوگی، ناجائز منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزوں کیخلاف ملک گیر سطح پر کریک ڈاؤن کیا جائے،حکومت اپنی معاشی پالیسیوں کا ازسو نوجائزہ لے اور عام آدمی کو ریلیف دینے کیلئے فوری اقدامات کیے جائیں، ان کے بغیر مہنگائی پر قابو پایا جاسکتا ہے نہ ہی عوام کی مشکلات میں کمی لائی جاسکتی ہے۔مہنگائی، بے روزگاری، گورننس کی ناگفتہ بہ صورتحال اور موجودہ اقتصادی پالیسیوں نے غریب عوام کے چولہے ٹھنڈے کر کے رکھ دئیے، خط غربت سے نیچے زندگی بسر کرنیوالوں کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔ بے جا ٹیکسز کی شرح میں اضافہ کے پیش نظر کاروباری افراد میں بھی تشویش کی لہر دوڑ رہی ہے۔وزیر اعظم عمران خان کی اس ہنگامی صورتحال میں خود آگے آنا ہوگا اور بہتری کیلئے ٹھوس اقدامات کرنا ہونگے۔چیئرمین پاکستان علماء کونسل و صدر وفاق المساجد و المدارس پاکستان حافظ محمد طاہر محمود اشرفی، مولانا اسعد زکریا قاسمی، مولانا عبدالکریم ندیم، علامہ عبد الحق مجاہد، مولانا محمد رفیق جامی، مولانا پیر اسد اللہ فاروق، علامہ طاہر الحسن، مولانا نعمان حاشر، مولانا محمد اسلم صدیقی، مولانا ایوب صفدر، قاضی مطیع اللہ سعیدی،پیر اسدحبیب شاہجمالی، علامہ اسید الرحمٰن سعید، مولانا عزیز اکبر قاسمی، مولانا محمد اشفاق پتافی اور قاری عصمت اللہ معاویہ نے کہا کہ موجودہ حکومت سے عوام کو بہت سی توقعات ہیں لیکن ابھی تک انہیں کوئی بہتری کے آثار نظر نہیں آرہے، آئے روز سامنے آنیوالے بحرانوں کی وجہ سے ان کی زندگی مزیداجیرن بن رہی ہے،اس وقت کراچی سے لے کر خیبر تک ہر جانب سے آٹا بحران کی اطلاعات آرہی ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -