"خیبرپختونخوا میں کرپشن عام ہے" تحریک انصاف کا خیبر پختونخوا سے وہ رکن اسمبلی جو کھل کر اپنی ہی پارٹی کیخلاف میدان میں آگیا

"خیبرپختونخوا میں کرپشن عام ہے" تحریک انصاف کا خیبر پختونخوا سے وہ رکن اسمبلی ...

  



پشاور(ویب  ڈیسک)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کی کارکردگی پر ان کی اپنی پارٹی کے اراکین ہی پھٹ پڑے اور کہا کہ صوبے میں کرپشن عام ہے ،  ہمارے وزیراعلیٰ سے جو کمزوریاں ہو رہی ہیں یہ پی ٹی آئی کا منشور تھا ہی نہیں ، خیبر پختونخوا میں بیورو کریسی

وزیر اعلیٰ کی کوئی بات نہیں سن رہی ہے ۔معاملات جوں کے توں چلنے کی صورت میں انہوں نے پارٹی سے علیحدگی کا بھی عندیہ دیدیا۔

نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو  میں علی خان ترکئی نے  وزیراعلیٰ پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا 80 فیصد اراکین اسمبلی ناراض ہیں،  پرویز خٹک کے مقابلے میں محمود خان کی کارگردگی صفر ہے ، اب صوبے میں محمود خان نہیں بلکہ بیوروکریسی انتظامات چلارہی ہے ، ویژن اور صلاحیت دونوں نہیں ہیں، ایسے بندے کیساتھ نہیں چلا رہے ۔ انہوں نے وزیراعلیٰ کے بھائی کی طرف سے ٹرانسفر پوسٹنگ کرانے اور وزیراعظم کو بریفنگ گورنر کی طرف سے دیئے جانے کی خبروں کو  سچائی قراردیتے ہوئے ان کاکہناتھاکہ عمران خان کے ویژن کے گرد جو لوگ بیٹھے ہیں، وہ کہتے ہیں کہ سب کچھ ٹھیک ہے لیکن دراصل سب کچھ ڈوب گیاہے ۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کا پروگرام اب ہے ہی نہیں، بالکل الٹ پلٹ چل رہاہے ، 45 ممبران کے ساتھ سابق وزیراعلیٰ پرویز خٹک نے صحت، تعلیم اور پولیس میں کارکردگی کر کے دکھائی،پرویز خٹک کی اچھی کارکردگی کی وجہ سے وفاق میں پی ٹی آئی کی حکومت بنی۔ 

انہوں نے کہاکہ اب خیبر پختونخوا میں کرپشن عام ہے ، میرے پائوں قبر میں پڑے ہوئے ہیں،اللہ کو جواب دہ ہوں، میں اب کیوں جھوٹ بولوں ؟ ہمارے پاس تو یہ آپشن ہے کہ یہ لوگ ڈبونا چاہتے ہیں تو ہم ایسی کشتی میں سفر ہی نہیں کریں گے، اگر عمران خان کو اطلاع ملی اور انہوں نے نوٹس لے لیا اور معاملہ ٹھیک ہوجائے تو کوئی مسئلہ نہیں، ایک قدرتی سی چیز ہے کہ جب ایک بندہ نہیں کرسکتا تو اس کیساتھ میں کیوں مروں، ذاتی طورپر مجھے اللہ کو ہی جواب دینا ہے تو میں تو ان کیساتھ کبھی شریک نہیں ہوگا۔ 

مزید : سیاست /علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور