قیامت مزید قریب آگئی، سائنسدانوں نے گھڑی آگے کردی، خطرے کی گھنٹی بجادی

قیامت مزید قریب آگئی، سائنسدانوں نے گھڑی آگے کردی، خطرے کی گھنٹی بجادی
قیامت مزید قریب آگئی، سائنسدانوں نے گھڑی آگے کردی، خطرے کی گھنٹی بجادی

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) ماہرین نے دنیا کے لیے خطرے کی گھنٹی بجا دی، قیامت مزید قریب آ گئی۔ دی مرر کے مطابق ماہرین نے 2020ءمیں قیامت کی گھڑی پر وقت مزید 20سیکنڈ آگے کر دیا ہے جس کا مطلب ہے کہ دنیا اس وقت تباہی کے انتہائی قریب پہنچ چکی ہے۔20سیکنڈ گھڑی آگے ہونے سے اب اس پر وقت آدھی رات سے محض 100سیکنڈ کی دوری پر ہے۔

اس کا مطلب ہے کہ اگر ہم اسی شرح سے ہر سال 20سیکنڈ قیامت کی طرف بڑھتے رہے تو 2025ءمیں قیامت آ جائے گی۔ واضح رہے کہ یہ گھڑی اس قیامت کا وقت نہیں بتاتی جس کا وعدہ رب کریم نے کر رکھا ہے۔ یہ انسانوں کی ایجاد کردہ تباہ کن ٹیکنالوجیز کے باعث دنیا کے تباہ ہونے کے خطرے سے آگاہ کرتی ہے۔ جب دنیا کو عالمی ایٹمی جنگ چھڑنے کا زیادہ خطرہ لاحق ہوتا ہے اس وقت اس گھڑی کا وقت اسی تناسب سے آگے بڑھا دیا جاتا ہے۔

اب تک انسان ایسے تباہ کن ہتھیار بنا چکا ہے اور مختلف ممالک کے درمیان کشیدگی اس نہج کو پہنچ چکی ہے کہ یہ گھڑی دنیا کی اس ممکنہ ہولناک تباہی سے صرف 100سیکنڈ پیچھے کھڑی ہے۔گھڑی کے وقت میں یہ حالیہ اضافہ ماہرین کے بورڈ نے 6ماہ کی مشاورت کے بعد کیا ہے جس میں امریکہ ایران، ایران سعودی عرب اور دیگر ممالک کے باہمی تنازعات اور دنیا میں تباہ کن ہتھیاروں میں اضافے کی شرح کو مدنظر رکھا گیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس