پی ٹی آئی وزرا کی نا اہلی، ن لیگ دور کی کرپشن اپنے سر لے لی، ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ کا ڈیٹا لیگی دور حکومت میں لیا گیا

پی ٹی آئی وزرا کی نا اہلی، ن لیگ دور کی کرپشن اپنے سر لے لی، ٹرانسپیرنسی ...
پی ٹی آئی وزرا کی نا اہلی، ن لیگ دور کی کرپشن اپنے سر لے لی، ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ کا ڈیٹا لیگی دور حکومت میں لیا گیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی جانب سے پاکستان میں کرپشن میں اضافے کی رپورٹ جاری کی گئی ہے، رپورٹ سامنے آنے پر تحریک انصاف کی حکومت کو خوب تنقید کا نشانہ بنایا گیا، جواب میں تحریک انصاف نے ٹرانسپیرنسی کے سربراہ پر الزامات لگانا شروع کردیے، اس سارے قضیے میں اب ایک نئی اور دلچسپ صورتحال پیدا ہوگئی ہے۔

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کے کرپشن پرسیپشن انڈیکس کے حوالے سے یہ انکشاف سامنے آیا ہے کہ اس میں جس کرپشن کا تذکرہ کیا گیا ہے وہ دراصل مسلم لیگ ن کے دور حکومت کی تھی۔

تجزیہ کار ارشاد بھٹی کے مطابق ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی2019کی رپورٹ جس میں پاکستان کا سکور33سے کم ہو کر 32 ہوا اور پاکستان 117 ویں درجے سے 120 ویں درجے پر چلا گیا، اس رپورٹ کیلئے پاکستان میں8 ایجنسیوں نے اعدادوشمار اکٹھے کیے، ان 8میں سے6 ایجنسیوں کے مطابق 2018 اور 2019 کے سکور میں کوئی تبدیلی نہیں دیکھی گئی۔

ارشاد بھٹی نے کہا کہ ڈیٹا جمع کرنے والی 8 میں سے جن 2 ایجنسیوں نے منفی ریٹنگ دی، ان دونوں ایجنسیوں نے خود مانا کہ ہماری اس رپورٹ میں غلطی کا مارجن زیادہ ہے۔ دوسری بات ایک ایجنسی نے پاکستان سے ڈیٹافروری 2015 سے جنوری 2017 تک نواز دور میں ڈیٹا اکٹھا کیا جبکہ دوسری ایجنسی کاڈیٹا 2017کا ہے۔

صحافی و تجزیہ کار صابر شاکر کا کہنا ہے کہ اپنی نا اہلی کے باعث تحریک انصاف کے وزرا نے ن لیگ دور کی کرپشن اپنے سر لے لی۔ پی ٹی آئی کے وزرا اور مشیروں نے ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ کا مطالعہ ہی نہیں کیا۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /قومی