سندھ بے قابو‘ دریائی کٹاؤ سے متعدد مکان‘ فصلیں تباہ‘ لوگوں کا اللہ حافظ 

    سندھ بے قابو‘ دریائی کٹاؤ سے متعدد مکان‘ فصلیں تباہ‘ لوگوں کا اللہ حافظ 

  

مظفرگڑھ (نامہ نگار) مظفرگڑھ کی تحصیل کوٹ ادو میں ہیڈ تونسہ بیراج کے مقام پر دریائے سندھ نے تباہی مچا دی ہے دریائی کٹاؤ سے متعدد مکان اور سینکڑوں ایکڑ اراضی پر کھڑی فصلیں دریا بردہو گئی ہیں آر ڈی3 سپربند کو شدید نقصان پہنچا ہے جس سے عوام میں خوف(بقیہ نمبر37صفحہ 6پر)

 وہراس پھیل گیا ہے اللہ بخش،خدا بخش،کرم داد،رحیم بخش،ملک منظور حسین اور علاقہ کے متعدد دیگر رہائشیوں نے بتایا کہ یوں تو 2010 سے دریائی کٹاو کا عمل جاری ہے لیکن گزشتہ برس سے اس عمل میں تیزی آ گئی ہے جس کی وجہ سے متعدد مکان اور سینکڑوں ایکڑ پر کھڑی فصلیں دریا برد ہو چکی ہیں انہوں نے بتایا کہ آر ڈی 3 سپر بند کٹاو کی زد میں ہے اس کا 300 فٹ حصہ دریا کی نذر ہو چکا ہے اور بچا ہوا سپر بھی خستہ حالی کا شکار ہے انہوں نے بتایا کہ سپر کے سامنے ایک بستی ہے اور فلڈ بند ہے سپر ٹوٹنے کی صورت میں 300 گھروں پر مشتمل اس بستی کے دریا برد ہونے کا اور فلڈ بند کے ٹوٹنے کا  شدید خطرہ ہے اور سپر ٹوٹنے کے اثرات سے تونسہ بیراج کے متاثر ہونے کا  بھی خدشہ ہے انہوں نے کہا کہ علاقہ کی آبادی غریب کسانوں پر مشتمل ہے جو مزید نقصان برداشت نہیں کر سکتے انہوں نے وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار سے صورتحال کا نوٹس لے کر فوری طور پر سپر اور فلڈ بند کو مضبوط کرنے اور دریائی کٹاو کو روکنے کیلئے اقدامات کا مطالبہ کیا ہے جبکہ محکمہ ایری گیشن کے سب انجئنیر حفیظ لغاری نے کہا ہے کہ محکمہ اریگیشن صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہے اور سپر اور فلڈ بند کو مضبوط بنانے کیلئے فنڈز فراہمی کے بارے میں اعلی ا حکام کو لکھ چکا ہے فنڈز ملتے ہی سپر اور فلڈ بند کو مضبوط اور محفوظ بنانے کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔

اللہ حافظ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -