ضلعی انتظامیہ کا آپریشن، کھوکھربرادران سے 38 کنال سرکاری زمین واگزارکرالی

ضلعی انتظامیہ کا آپریشن، کھوکھربرادران سے 38 کنال سرکاری زمین واگزارکرالی
ضلعی انتظامیہ کا آپریشن، کھوکھربرادران سے 38 کنال سرکاری زمین واگزارکرالی

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)ضلعی انتظامیہ لاہور نے کھوکھر برادران سے 38 کنال سرکاری زمین واگزارکرالی۔

نجی ٹی وی 92 نیوز کے مطابق ذرائع کاکہناہے کہ ضلعی انتظامیہ نے کھوکھربرادران سے سرکاری زمین واگزار کرانے کیلئے جوہر ٹاﺅن میں آپریشن کیا،کھوکھربرادران نے جعل سازی سے زمین پرقبضہ کیاتھا ، کھوکھر برادران کو زمین چھوڑنے کےلئے نوٹس جاری کئے گئے تھے ،نوٹس کے باوجود عمل نہ کرنے پر آپریشن کیاگیا ۔

ذرائع کاکہناہے کہ زمین کی مالیت سوارب روپے ہے،کلکٹر اشتمال کے فیصلے کی روشنی میں آپریشن کرکے زمین کو واگزار کرایاگیا، انتظامیہ نے زمین واگزار کرا کر حکومت پنجاب کے نام کردی،آپریشن کے دوران سیف الملوک کھوکھر کے بھانجے طاہر جاوید اور برادرانسبتی کے گھر مسمار کر دیئے گئے جبلہ ملحقہ سیف مارکیٹ کو بھی بلڈوز کردیاگیا۔

رہنما مسلم لیگ ن سیف الملوک کھوکھر نے کہاہے کہ انتظامیہ وزیراعظم عمران خان کو خوش کرنے کیلئے بار بار کھوکھر پیلس پر آپریشن کرنے کی کوشش کررہی ہے، قانونی طریقہ کار اختیار کرکے بھرپور دفاع کریں گے۔

قبل ازیں مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما سیف الملوک کھوکھر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے خدشہ ظاہر کیا کہ رات گئے کھوکھر پیلس پر آپریشن کی اطلاعات ہیں،واضح کرنا چاہتے ہیں کہ عدالتی کا حکم امتناعی ہے، کارروائی سے گریز کیا جائے، آپریشن کی صورت میں قانونی تقاضوں کو مدنظر رکھتے ہوئے بھرپور دفاع کریں گے۔

سیف الملوک کھوکھر نے الزام عائد کیا کہ پی ڈی ایم جلسوں میں متحرک کردار ادا کرنے کی سزا دی جارہی ہے۔انہوں نے چیلنج کیا کہ محکمے ایک پلیٹ فارم پر اکٹھے ہوجائیں، سب کے جواب دوں گا۔ کھوکھر برادران کا کہناتھا کہ ڈکٹیٹر کے دور میں مشکل وقت دیکھا، یہ وقت بھی نکل جائے گا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -