نجی ریسٹورنٹ کی مالکن خواتین کی اپنے منیجر کی مذاق اڑانے کی ویڈیو پر اداکار یاسر حسین بھی میدان میں کود پڑے ، پیغام جاری کر دیا 

نجی ریسٹورنٹ کی مالکن خواتین کی اپنے منیجر کی مذاق اڑانے کی ویڈیو پر اداکار ...
نجی ریسٹورنٹ کی مالکن خواتین کی اپنے منیجر کی مذاق اڑانے کی ویڈیو پر اداکار یاسر حسین بھی میدان میں کود پڑے ، پیغام جاری کر دیا 

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن ) اداکار یاسر حسین نے اسلام آباد کے ریستوران کنولی کے واقعے پر ردعمل دیتے ہوئے طنز کیا ہے کہ ہم سب نے انگریزی کے خلاف انگریزی میں ہی آواز اٹھائی ہم نے انگریزی کو ”کول“ اور اردو کو ”جہالت“ بنادیا ہے۔

چند روز قبل اسلام آباد کے ریستوران کنولی کی ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس میں ریستوران کی مالکن دو خواتین اپنے منیجر کی خراب انگریزی کا مذاق اڑارہی تھیں۔ یہ ویڈیو دیکھتے ہی دیکھتے ہی سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی تھی اور پاکستانی عوام کے ساتھ شوبز فنکاروں نے بھی خواتین کی اس شرمناک حرکت کی مذمت کی تھی۔

تاہم دلچسپ بات یہ ہے کہ تمام فنکاروں نے ان خواتین کی انگریزی میں ہی مذمت کی تھی اور کسی نے بھی اردو کی سپورٹ میں اردو میں کچھ نہیں کہا تھا۔ اداکار یاسر حسین نے اسی طرف توجہ دلاتے ہوئے شوبز فنکاروں پر طنز کرتے ہوئے کہا ہے ”مزے کی بات یہ ہے کہ کنولی کی اونرز نے اپنے منیجر کی انگریزی کا مذاق اڑایا اور ساری دنیا (جس میں ہماری فنکار برادری بھی شامل ہے) سب نے انگریزی میں ہی آواز اٹھائی۔

یاسر حسین نے مزید لکھا کسی نے کبھی سوچا ہے کہ اس منیجر کو انگریزی بولنے کی ضرورت کیوں پڑی؟ یہ احساس کمتری معاشرے میں آیا کہاں سے؟ ہم نے ہی انگریزی کو ”کول“ اور اردو کو ”جہالت“ بنادیا ہے۔ شرم کا مقام ہے۔“واضح رہے کہ اداکارہ اشنا شاہ، عدنان صدیقی، شہریار منور، احمد علی بٹ، انوشے اشرف سمیت بہت سے فنکاروں نے کنولی کی مالکن خواتین کی اس حرکت کی شدید الفاظ میں مذمت کی تھی جس میں دونوں اپنے مینجر کی خراب انگریزی کا نہ صرف مذاق اڑارہی تھیں بلکہ انہوں نے اس کی ویڈیو بناکر سوشل میڈیا پر بھی ڈال دی تھی۔

مزید :

تفریح -