سپین میں کورونا لاک ڈاون ,تجارتی سیکٹر بد حالی کا شکار

سپین میں کورونا لاک ڈاون ,تجارتی سیکٹر بد حالی کا شکار
سپین میں کورونا لاک ڈاون ,تجارتی سیکٹر بد حالی کا شکار

  

 بارسلونا(ارشد نذیر ساحل )کرسمس کے بعد 7 جنوری سے عائد ہونے والی پابندیوں نے بارسلونا کے تجارتی سیکٹر پر منفی اثرات مرتب کیے ہیں۔ کاروبار کی بندش نے بھی کاروبار کو متاثر کیاہے۔ کوروناوبا کے پھیلاو کے باعث کاتالان حکومت نے 7 فروری تک سخت پابندیوں کا اعلان کررکھاہے۔ ہسپانوی اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے بارسلونا اوبیرتا کے صدرگیبرئیل کا کہنا تھا وبا کی وجہ عائد کردہ پابندیوں نے کاروباری سیکٹر کوبہت نقصان پہنچایاہے۔ بارسلونا کے اہم علاقوں لا رمبلہ، پاسیو دی گراسیا، رمبلہ کاتالونیاسمیت بہت سے علاقوں میں شہری کاروباربند کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔ وبا کے باعث سیل کے دنوں میں بہت سارے بڑے برانڈز نے دوکانیں بند کرکے آن لائن کاروباری ویب سائٹس کا رخ کیاہے۔ بہت سارے برانڈز نے صرف آن لائن ڈیلیوری کا اعلان کیا۔ تاحال صورتحال قابو میں آتی دکھائی نہیں دے رہی۔ ماہرین کے مطابق موجودہ پابندیاں فروری کے آخر تک عائد رہ سکتی ہیں۔ سپین اوردیگر یورپی ممالک نے ریسٹورنٹس سمیت متعدد کاروبار بند کررکھے ہیں۔ اس کا مقصد کورونا وباکی تیسری لہر اور وائرس کی نئی قسم سے بچنا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -