ڈینگی کی ممکنہ وبائ‘وزیر اعلیٰ پنجاب نے سرویلنس مہم تیز کرنیکا حکم دیدیا

ڈینگی کی ممکنہ وبائ‘وزیر اعلیٰ پنجاب نے سرویلنس مہم تیز کرنیکا حکم دیدیا

  

لاہور (جنرل رپورٹر) وزیراعلی پنجا ب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ حالیہ بارشوں کے باعث ڈینگی ویکٹر کی سر و یلنس مہم کو مزید تیز کیا جائے ا ور آﺅٹ ڈور کے ساتھ ساتھ ان ڈور سرویلنس پر خصوصی توجہ دی جائے تا کہ لاروا کا شروع میں ہی خاتمہ ممکن ہو سکے -وہ ےہاںڈینگی کی ممکنہ وباءسے نمٹنے کے لئے احتیاطی انتظامات کاجائزہ لینے کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کر رہے تھے -اجلاس میں معاون خصوصی خواجہ سلمان رفیق ، اراکین اسمبلی ،مختلف محکموں کے سیکرٹریز ، ترقیاتی اداروں کے سربراہان ،ٹیچنگ ہسپتالو ں کے پرنسپلز اورماہرین نے شرکت کی- سیکرٹریز ، کمشنر لاہور ڈویژن اور ترقیاتی اداروں کے سربراہان نے ڈینگی کی ممکنہ وباءسے نمٹنے کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلی محمد شہبازشریف نے کہاکہ ڈینگی کی ممکنہ وباءسے نمٹنے کے لئے کئے گئے انتظامات اطمینا ن بخش ہےں تا ہم ہمیں نگرانی اور ما نیٹرنگ کے عمل کو مزید بہتر بنانا ہے اور ان ڈور سرگرمیوں پر زیادہ توجہ مرکوز کرنی ہے-انہوںنے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ وہ ان ڈور سرویلنس کےلئے باقاعدہ حکمت عملی کے تحت کام کریں -وزیراعلی پنجاب نے کہاکہ تمام محکمے مربوط انداز میں ذمہ داریاں سر انجام دیں ا و ر ڈینگی کی ممکنہ وباءسے نمٹنے کے لئے پوری طرح چوکس رہیں-انہوںنے کہا کہ ڈینگی ویکٹر کی سرویلنس مہم کو مون سون موسم کے تناظر میں تیز کیا جائے اور آگاہی مہم بھر پور طور پر چلا ئی جائے -وزیراعلی پنجاب نے متعلقہ سیکرٹریز کو ہدایت کی کہ وہ خود بھی دورے کریں اور انتظامات کا ازخود جائزہ لے کر رپورٹ پیش کریں-انہوں نے کہاکہ ذمہ دار اور قابل اساتذہ کو تربیت دے کر ماسٹر ٹرینر بناےا جائے او رےہ ماسٹر ٹرینرز اپنے دیگر ساتھیوں کو تربیت دےں-وزیراعلی پنجا ب نے ہدایت کی کہ مختلف ا ضلاع میں سول سوسائٹی کے اشتراک سے سیمینارز کرائے جائیں اور ماسٹر ٹرینرز اس حوالے سے لیکچر ز دیں -انہوں نے مزید ہدایت کی کہ جن ڈاکٹرز ،پیرا میڈیکل سٹاف اوردیگر شعبوں کے افراد کو بیرون ملک سے تربیت دلائی گئی ہے وہ بھی ماسٹر ٹرنیر کی حیثیت سے فرائض سر انجام دیں - انہوںنے کہاکہ بارش کے بعد پانی کے فوری نکاس کے لئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں اور تالابوں میں ڈینگی لاروا کو تلف کرنے والی مچھلیاں چھوڑی جائیں -وزیراعلی محمد شہبازشر یف نے کہا کہ ٹائرز شاپس اور گوداموں کی سو فیصد رجسٹریشن ہونی چاہئےے اور خراب ٹائروں کی کٹائی کا عمل میکینکل طرےقے سے سر انجام دیا جائے ا ور اس حوالے سے کسی قسم کی نرمی نہ برتی جائے -انہوںنے صوبے میں صفائی کی خصوصی مہم بھی تیز کرنے ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ شہریوں کو بنیادی سہولیات فراہم نہ کرنے والی اورڈینگی کی روک تھام کے لئے موثر انتظامات نہ کرنے والی کوآپرٹیو ہاﺅسنگ سوسائٹیوں کے خلاف کارروائی کی جائے -انہوںنے کہاکہ شہریوں کی سہولت کے لئے ڈینگی کے حوالے سے معلومات کی فراہمی کے لئے ہےلپ لائن کو دوبارہ پوری طرح فعال کیا جائے -وزیراعلی نے کہاکہ طبی آلات پر اربوں روپے خرچ کئے جاتے ہیں اور ان طبی آلات کی مرمت کے لئے ورکشاپ کے قیام کا جائزہ لیا جائے -انہوںنے کہا کہ پرائیویٹ، ٹرسٹ اور دیگر ہسپتالوں میں ممکنہ وباءکے پیش نظر اضافی بستروں کا پیشگی انتظام ہونا چاہےے اور تمام ہسپتالوں میں مریضوں کے علاج معالجہ کے لئے بہترین انتظامات ہونے چاہیں -وزیراعلی نے کہاکہ رضاکاروں کی شمولیت سے ڈینگی کی ممکنہ وباءسے موثر طرےقے سے نمٹنے میں مدد ملے گی-انہوںنے کہاکہ تمام محکموں کو اپنے فرائض جا نفشانی اور محنت سے سرانجام دےنے چاہےں اورمشترکہ کوششوں سے ہی ڈینگی کامکمل کیا جا سکتاہے -اس موقع پر سیکرٹری لوکل گورنمنٹ نے بتایا کہ مختلف اضلاع میں ڈینگی بریگیڈبھجوا دےئے گئے ہیں او رعملے کوضروری تربیت بھی دی گئی ہے-سیکرٹری صحت نے بتایاکہ ڈینگی کی ممکنہ وباءسے نمٹنے او رمریضوں کے علاج معالجے کے لئے تمام انتظامات کر لئے گئے ہیں-سیکرٹری خوراک نے کہا کہ پنجاب فوڈ اتھارٹی تشکیل دے دی گئی ہے اور اتھارٹی میں میرٹ پر سٹاف بھرتی کیا گیاہے جبکہ بازاروں میں اشیائے خور دو نوش کوڈھانپ کر فروخت کرنے کی مہم جاری ہے۔سیکرٹری سکولز نے بتایا کہ سکولو ںکی صفائی کے لئے خصوصی ہفتہ صفائی برائے انسداد ڈینگی منایا گیا ہے۔ ڈینگی کے حوالے سے 340 اساتذہ کو تربیت دی جا چکی ہے جبکہ 400ماسٹر ٹرینرز تیار کئے جارہے ہیں- ڈینگی کو نصاب کا حصہ بنایا گیا ہے اور اس حوالے سے امتحانات میں سوالات بھی رکھے جائیں گے۔ سیکرٹری سوشل ویلفیئر نے اجلاس کو بتایاکہ ہزاروں رضا کاروں کی رجسٹریشن ہو چکی ہے ا ور تربیت کاعمل جاری ہے اجلاس میں دیگر متعلقہ حکام نے بھی ڈینگی کی ممکنہ وباءسے نمٹنے کے حوالے سے اپنے اپنے محکموں کی جانب سے کئے گئے انتظامات سے آگاہ کیا۔ دریںاثناءگرین ٹاﺅن، ٹاﺅن شپ اور دیگر ملحقہ علاقوں کے لوگوں اور مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں سے ملاقاتوں کے دوران محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ قائد اور اقبال کے پاکستان کو علی بابا چالیس چوروںنے تباہی کے دہانے پر لا کھڑا کیا ہے اور آئندہ عام انتخابات میں پاکستان کے عوام ان کرپٹ حکمرانوں کو سبق سکھائیں گے- لوڈشیڈنگ سے پنجاب کی صنعتیں، زراعت اور دیگر شعبے تباہ ہو کر رہ گئے ہیں اور لاکھوں لوگ بے روزگار ہوگئے ہیں- ملک کو تاریخ کی بدترین لوڈشیڈنگ کا سامنا ہے- سحری اور افطار کے اوقات میں بھی لوگوں کو لوڈشیڈنگ کی وجہ سے انتہائی مشکلات کا سامنا ہے لیکن بے ضمیر حکمرانوں کے کان پر جوں تک نہیں رینگی- ہم نے بے ضمیر حکمرانوں کے مردہ ضمیر کو جھنجھوڑنے کے لئے ٹینٹ آفس قائم کر رکھا ہے۔ پنجاب کے ساتھ لوڈشیڈنگ کے حوالے سے سراسر زیادتی کی جا رہی ہے- نااہل حکمرانوں نے اپنی لوٹ مار سے پوری قوم کو پریشان کر رکھا ہے۔ وزیراعلی محمد شہباز شریف نے کہا کہ حکمران اب بھی ہوش کے ناخن لے لیں تو ملک کو قائدؒ اور اقبالؒ کے تصورات کے مطابق ڈھالا جاسکتا ہے- رینٹل پاور پراجیکٹ میں اربوں روپے کی رشوت کھائی گئی- پنجاب کی منافع بخش کمپنیوں کا پیسہ نقصان میں جانے والی کمپنیوں کو دے کر ہمارے ساتھ زیادتی کی جا رہی ہے- لوگ ذہنی مریض بن چکے ہیں- چیچو کی ملیاں اور نندی پور میں 900 میگاواٹ کے 2 منصوبے وفاقی حکومت کی نااہلی اور کرپشن کی نذر ہوئے اور ڈیڑھ سال سے ان دونوں منصوبوں کی مشینری کراچی میںپڑی ہے اور چینی کمپنی واپس چلی گئی ہے- ان منصوبوں پر 70 ارب روپے خرچ ہوئے پلانٹ بند ہیں اور اس منصوبے کو دوبارہ شروع کرنے میں 20 ارب روپے اور صرف ہوں گے اور 2 سال مزید ضائع ہوں گے- انہوںنے کہا کہ لوڈشیڈنگ سے جہاں بے روزگاری میں اضافہ ہو رہا ہے وہاں امن و امان کے مسائل بھی پیدا ہو رہے ہیں- ائیرکنڈ یشنڈکمروں میں بیٹھ کر غریب عوام کی مشکلات کا احساس نہیں کیا جاسکتا- این ایف سی ایوارڈ میں پنجاب نے قومی یکجہتی اور ایثار کی لازوال مثال قائم کرکے اپنے حصے کے 11ارب روپے چھوڑے- ملک ہم سب کا ہے اور ہمیں مل کر اسے سنوارنا ہے- لیکن اسلام آباد کے حکمرانوں نے یکساں لوڈشیڈنگ کے فیصلے پر عملد رآمد نہیں کیا - انہوں نے کہا کہ عوام کی خاطر میں تن من دھن نچھاور کردوں گا اور عوامی مسائل کے حل کے لئے آخری حد تک جاﺅں گا- وزیراعلی نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے مئی 2011ءسے اغیار کی ایسی امداد ترک کردی ہے جس سے عزت پر حرف آتا ہو- انہوں نے کہا کہ اغیار کی امداد ترک کرنے کے باوجود پنجاب میں ترقیاتی منصوبے کامیابی سے جاری ہیں- انہوں نے کہا کہ علی بابا چالیس چوروں سے جان چھڑا کر ایسی قیادت لانا ہوگی جو ملک و قوم سے ہمدردی رکھتی ہو اوران کے مسائل حل کرے- وزیراعلی پنجاب نے کہا کہ میں گرمی سے نہیں گھبراتا، عوام کے لئے جتنی سختیاں برداشت کرنا پڑیں، کروں گا- بعدازاں وزیراعلی پنجاب نے لوگوں اور مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں کے مسائل سنے اور ان کے حل کے لئے موقع پر ہی احکامات جاری کئے- وزیراعلی پنجاب نے پیر کلاں گاﺅں میں پرائمری سکول کو ہائی سکول کا درجہ دینے اور گوالا کالونی رکھ چند رائے میں مالکانہ حقوق کے حوالے سے رپورٹ طلب کرلی- انہوں نے ڈی آئی جی آپریشن کو علاقے میں قبضہ گروپوں کے خلاف فوری کارروائی کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ پولیس علاقے سے جرائم کے خاتمے میں اپنا کردار ادا کرے اور موثر گشت کو یقینی بنائے- وزیراعلی پنجاب نے علاقے میں سیوریج نظام کی بہتری، پینے کے پانی کی فراہمی او رکمرشلائزیشن فیس کے حوالے سے شکایات کا فوری نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام کو ان کے حل کے لئے ہدایات جاری کیں- وزیراعلی پنجاب جب ٹینٹ آفس پہنچے تو لوگوں کی بڑی تعداد وہاں جمع ہوگئی اور انہوں نے شہباز شریف زندہ باد کے نعرے لگائے- لوگوں نے گرین ٹاﺅن اور ٹاﺅن شپ میں ریکارڈ ترقیاتی کام کرانے پر وزیراعلی شہباز شریف کو خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ آپ نے علاقے میں جتنے ترقیاتی کام کرائے ہیں اس پر پورے علاقے کے لوگ آپ کے مشکور ہیں۔ وزیراعلیٰ نے ارفع کریم سوفٹ ویئر ٹیکنالوجی پارک میں ارکان اسمبلی اور ضلعی انتظامیہ کے متعلقہ حکام کے اجلاس کی صدارت بھی کی۔ وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ ارکان اسمبلی رمضان بازاروں کے باقاعدگی سے دورے کریں اوربارش ہونے کی صورت میں واسا حکام کے ساتھ مل کر نکاسی ا ٓب کے انتظامات بھی کریں۔ کیونکہ رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں وہ عوا م کے مسائل حل کر کے دین و دنیا دونوں کما سکتے ہیں۔ وزیراعلیٰ نے ارکان اسمبلی کو رمضان بازاروں کے دورے کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ تمام ارکان اسمبلی اپنے اپنے حلقو ں میں لگائے گئے بازاروں میں اشیائے ضرورےہ کی قیمتوں او رکوالٹی کو چےک کریں اور عوام کو منافع خوروں سے بچانے کے لئے خود میدان میں نکلیں -انہوںنے کہا کہ عوام نے آپ کومنتخب کیا ہے لہٰذا ہر مشکل گھڑی میں آپ کوعوام کے ساتھ کھڑے ہونا چاہےے -انہوںنے کہاکہ میں عوامی مسائل کے حل میں کوئی کوتاہی برداشت نہیں کروں گا۔ انہوںنے کہاکہ بارش کے پانی کی فوری نکاس کے لئے کئے گئے انتظامات کو ارکان اسمبلی مانیٹر کریں اور تمام ڈی واٹرنگ سیٹ مکمل طور پر فنکشنل ہونے چاہئیں- ارکان اسمبلی کی شکایت پر وزیراعلی پنجاب نے واسا کے لئے فوری طور پر20 نئے جنریٹر خریدنے اور شمالی لاہور میں رمضان بازار لگانے کی ہدایت کی۔

مزید :

صفحہ اول -