سپریم کورٹ میڈیا میں موجود گندی مچھلیوں کا احتساب کرے‘منور حسن

سپریم کورٹ میڈیا میں موجود گندی مچھلیوں کا احتساب کرے‘منور حسن

  

لاہور(نمائندہ خصوصی( امیر جماعت اسلامی پاکستان سید منور حسن نے سپریم کورٹ سے مطالبہ کیاہے کہ میڈیا میں موجود گندی مچھلیوں کا احتساب کیا جائے۔ جو لوگ کرپشن میں ملوث ہیں ان کے خلاف فوری طور پر ایکشن لیا جاناچاہیے اور سب کو ایک چھڑی سے ہانکنے کے بجائے مکمل طور پر صاف و شفاف تحقیقات کے بعد تعین کیا جاناچاہیے کہ کون کون اس دھندے میں ملوث ہے اور بہتی گنگا میں ہاتھ دھوتا رہاہے ۔ انہوںنے کہاکہ کرپٹ اور بددیانت لوگوںکو بے نقاب کرنے کے لیے ضروری ہے کہ چیف جسٹس کرپشن کے خلاف دائر درخواستوں کا جائزہ لے کر ایک کمیشن مقرر کریں جو متعلقہ افراد کے خلاف الزامات کا جائزہ لے اور جن لوگوں پر الزامات ثابت ہوجائیں تو ان کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے۔ سید منورحسن نے کہاکہ میڈیا کے افراد نے سپریم کورٹ میں اس بارے میں درخواستیں دائرکی ہیں اور مطالبہ کیاہے کہ ان کے خلاف لگائے گئے الزامات کی غیر جانبدار کمیشن سے تحقیقات کرائی جائے اگر وہ مجرم ثابت ہوں تو انہیں سخت سزا دی جائے بصورت دیگر الزام لگانے والوں کو کٹہرے میں کھڑا کیا جائے ۔سید منورحسن نے کہاہے کہ میڈیا اپنے لیے کچھ اصول و ضوابط طے کرے اورقومی رہنمائی کا فریضہ ادا کرے ۔ انہوں نے کہاکہ پیمرا اپنے فرائض کو مکمل طور پر نظر انداز کر چکاہے ۔ ملک بھر سے ناظرین کی سینکڑوں شکایات پر مبنی درخواستیں فائلوں میں گم ہو چکی ہیں ۔ فحاشی و عریانی کا ایک سیلاب ہے جس نے نوجوان نسل کو اپنی لپیٹ میں لے رکھاہے ۔ مخرب اخلاق ڈراموں اور فحش اشتہاروں سے پتہ چلتاہے کہ یہ کسی اسلامی ملک کے بجائے یہودی نصرانی یا ہندو ملک کا میڈیا ہے ۔ الیکٹرانک میڈیا نے تو قومی اقدار کا جنازہ نکال دیاہے ۔آدھے گھنٹے بعد نشر ہونے والے ہر خبر نامے میں بھارتی فلموں کے عریاں اور فحش ڈانس اور گانوں سے گھروں میں بیٹھ کر خبریں تک سننا محال ہو گیاہے ۔ سپریم کورٹ فوری طور پر اس خطرناک رجحان کا نوٹس لے اور ذمہ دار اداروں کا محاسبہ کرے تاکہ قومی تہذیب و تمدن کو تباہ ہونے سے بچایا جاسکے ۔

مزید :

صفحہ آخر -