عوام منافع خوروں کی عقل ٹھکانے لانے کیلئے مہنگی اشیاءکا بائیکاٹ کریں‘میاں غلام حسین

عوام منافع خوروں کی عقل ٹھکانے لانے کیلئے مہنگی اشیاءکا بائیکاٹ کریں‘میاں ...

  

لاہور( جنرل رپورٹر) انجمن حقوق تحفظ شہریان لاہور کے چیئر مین میاں حاجی غلام حسین نے کہا ہے کہ رمضان المبارک میں وفاقی اور صوبائی حکومت عوام کو کوئی بڑا ریلیف نہیں دے سکیں ۔ یہ پہلا رمضان المبارک ہے جہاں عوام کو دونوں ہاتھوں سے منافع خور لوٹ رہے ہیں۔ حکومت عوام کی غربت کا تماشہ دیکھ رہی ہے۔ گراں فروش اور منافع خور باز نہیں آتے تو عوام خوردونوش کی وہ اشیاءجن کی قیمتیں بے قابو ہوچکی ہیں ان کا صرف 3دن کے لئے بائیکاٹ کردیں تو منافع خوروں کے ساتھ ساتھ حکومت، منڈیوں کے مافیا کی بھی عقل ٹھکانے آجائے گی۔ وہ پاکستان فورم میں گفتگو کررہے تھے۔حاجی غلام حسین نے پاکستان فورم میں وفاقی اور صوبائی صورتحال پر روشنی ڈالی۔ انہوںنے صوبائی حکومت کی پالیسیوں اور عوام کی زبوں حالی پر تنقیدی نگاہ سے اظہار خیال کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ رمضان کی آمد سے پہلے ہی مہنگائی زور پکڑ چکی تھی جبکہ حکومتی دعوے دھرے کے دھرے ہی رہ گئے۔ انہوں نے کہا کہ ذخیرہ اندوزوں نے منڈیوں پر قبضہ کررکھا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ رمضان میں لوڈ شیڈنگ میں کمی کا اعلان کیا گیا تھا مگر صوبائی دالحکومت کے مختلف علاقوں جن میں شمالی لاہور کے علاقے ہیں وہاںپر لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ 15سے 18گھنٹے کردیا گیا ہے۔ لوگوں کو سحری اور افطاری کے وقت لوڈ شیڈنگ کا تحفہ دیا جاتا ہے۔ انہوں نے میاں برادران اور ان کے رمضان بازاروں پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا رمضان بازار میں عوام کو کوئی ریلیف نہیں دیا جا رہا۔ حاجی عدیل نے رمضان بازاروں پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پنجاب نے 1300 کے قریب مجسٹریٹوں کی تعیناتی کی ہے ،ان کی اپنی کوئی اہلیت نہیں ہے۔ انہوںنے کہا کہ عوام پہلے ہی بد امنی ، مہنگائی، دہشت گردی اور چور بازاری سے تنگ آچکے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -