ایک برس میں 40 اشیاءکی قیمتوں میں 65 فیصد تک اضافہ ہوا

ایک برس میں 40 اشیاءکی قیمتوں میں 65 فیصد تک اضافہ ہوا

  

لاہور(کامرس رپورٹر)پاکستان ادارہ شماریات کے مطابق گزشتہ سال یکم رمضان سے اس سال رمضان تک روزمرہ استعمال کی 40 اشیاءکی قیمتوں میں 65 فیصد تک اضافہ ہوا۔اعداد و شمار کے مطابق ایک سال میں کھانے پینے اور روزمرہ استعمال کی 53 بنیادی اشیاءمیں سے 40 کی قیمتوں میں 65 فیصد تک اضافہ ہوا۔ ملک بھر میں اشیاءکی اوسط قیمتوں کے مطابق ایک سال میں مٹن کی قیمت 60 روپے فی کلو اور بیف کی 35 روپے فی کلو بڑھ گئی۔ سرخ مرچ 50 روپے، چنے کی دال 40 روپے، کوکنگ آئل 22 روپے اور گھی 18 روپے فی کلو مہنگا ہوا۔ چکن کی قیمت میں 20 روپے فی کلو، پیاز 15 روپے، دودھ، دہی اور چاول کی قیمت میں 10 روپے فی کلو اضافہ ہوا۔ خشک دودھ کی قیمت 150 روپے فی کلو اور درمیانے سائز کی بریڈ کی قیمت 5 روپے بڑھی۔ پھلوں میں کیلے کی قیمت میں 50 روپے فی درجن کا اضافہ ہوا۔ اشیائے خورونوش کے علاوہ کپڑے کی قیمت میں 35 روپے فی گز، جوتوں کی قیمت میں کم سے کم 40 روپے فی جوڑا اور جلانے کی لکڑی کی قیمت میں 80 روپے فی 40 کلو گرام کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

مزید :

کامرس -