یمن میںالقاعدہ کی بدعنوان حکام کے ہاتھ کاٹنے کی دھمکی

یمن میںالقاعدہ کی بدعنوان حکام کے ہاتھ کاٹنے کی دھمکی

  

عدن(ثناءنیوز)القاعدہ نے یمن کے جنوب مشرقی صوبہ حدرالموات میں بدعنوان حکام کے ہاتھ کاٹنے کی دھمکی دی ہے ۔ انصار الشریعہ جس نام کے ساتھ یمن میںکچھ وقت کیلئے القاعدہ کام کرتی رہی ہے،کے دستخطوں سے جاری ایک بیان میں کہا گیا کہ حدرالموات میں امریکی ایجنٹوں کے خاتمے اور جادوگروں اور جادو کرنے والوں کے خاتمے کے بعد ہم تمام کرپٹ حکام پر زور دیتے ہیںکہ ہم انہیں اغوا کر کے ان کے ہاتھ کاٹ کر اللہ کے قانون کا نفاذ کریں گے۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ بیان پملفٹس پر چھاپ کر صوبے میں تقسیم کیا گیا۔ رواں ہفتے کے اوائل میں نیٹ ورک کے ارکان نے اسی طرح کے پمفلٹس تقسیم کئے تھے جن میں خواتین کو منع کیا گیا تھا کہ وہ محرم کے بغیر گھروں سے باہر نہ نکلیں اور دھمکی دی تھی کہ جو شریعت کی خلاف ورزی کرے گا اسے سزا دی جائے گی۔عرب خطے میں القاعدہ یا اے کیو اے پی یمن کے متعدد علاقوں میں سرگرم ہے،جس میں 2011 کی احتجاج تحریک جس کے نتیجے میں سابق صدر علی عبداللہ صالح کی معزولی عمل میں آئی کے دوران مرکز کی اتھارٹی کی کمزوری کا فائدہ اٹھایا تھا،اے کیو اے پی کو امریکہ نیٹ ورک کا خطرناک ترین گروپ قرار دیتا ہے جو امریکہ کے خلاف حملوں میں ملوث رہا ہے۔سیکورٹی فورسز پر معمول کے مطابق حملے کرنے کے علاوہ اے کیو اے پی نے جادوگری یا ہم جنس پرستی کے الزام میں اسلامی قانون کے مطابق متعدد لوگوں کو قتل بھی کیا۔اسلام کے خلاف غیر فطری روایات کی بنیاد ڈالنے والوں کے سر قلم کرنے کے اقدام کو سراہا بھی گیا۔

اس نے چوری کے الزام میں متعدد شہریوں کے ہاتھ بھی کاٹے ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -