ایل پی جی کے کمرشل استعمال پر پابندی کیخلاف عید کے بعد تحریک چلانیکا اعلان

ایل پی جی کے کمرشل استعمال پر پابندی کیخلاف عید کے بعد تحریک چلانیکا اعلان

  

لاہور (خبر نگار( ایل پی جی کے کمرشل استعمال پر پابندی کے خلاف ایل پی جی ڈسٹی بیوشن ایسوی ایشن اور رکشہ یونین نے عیدالفطر کے بعد احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کر دیا ہے۔ ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن اور عوامی رکشہ یونین نے گزشتہ روز پریس کلب کے باہر اوگرا کے کالے قانون کیخلاف دوسرا بڑا احتجاج کیا ۔ احتجاج کے بعد ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن کے چےئرمین عرفان کھوکھر اور عوامی رکشہ یونین کے صدر مجید غوری کی ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔جس میں ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن کے عہدیداران میاں لیاقت، رانا ارشد، عتیق خان، اسلم خان،ملک ظفر، عاطف جاوید نے خطاب کیا۔ چےئرمین عرفان کھوکھر نے خطاب کرتے ہوئے کہااوگرا کو مزید چند دنوں کا الٹی میٹم دیتے ہیں اگر ایل پی جی کے آٹو میں استعمال پر پابندی کے کھوکھلے قانون کو واپس نہ لیا گیا تو 11اگست کو ہم اوگرا کے دفتر کا گھیراو کرینگے۔ ۔حکومت کو بدنام کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔ 2005میں ایل پی جی کو آٹو سیکٹر میں لیگل قرار دے دیا گیا تھاپھراوگرا نے یہ کا لا قانون کس کو خوش کرنیکے کے لیے بنایا ہے۔ اوگرا کے دفتر میں موجود حکومت کو بدنام کرنے والے سازشی ٹولے کو باہر نکالا جائے جس نے اپنے مفاد کے لیے لاکھوں لوگوں کو بے روزگار کردیا۔ 30لاکھ رکشہ ڈرائیور کے خاندان اس سے متاثر ہوئے ہیں۔ ایل پی جی ڈیلروں کا کاروبار بھی ٹھپ ہوگیا ہے۔ پولیس ، سول ڈیفنس، ڈسٹرک گورنمنٹ کا ایل پی جی کی دکانوں پر جا کر رشوت کا دھندا عروج پر پہنچ گیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اوگراہمارا معاشی قتل کرنابندکرے اور غریب عوام کو سستی گیس سے محروم نہ کرے۔ وگرنہ ملک گیر احتجاجی تحریک چلانے سے بھی گریز نہ کیا جائے گا۔

مزید :

صفحہ آخر -