آئین کے تحت عدلیہ پارلیمنٹ کو حکم جاری نہیں کرسکتی،جسٹس خالد محمود خان

آئین کے تحت عدلیہ پارلیمنٹ کو حکم جاری نہیں کرسکتی،جسٹس خالد محمود خان

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے قرار دیا ہے کہ آئین کے تحت عدلیہ پارلیمنٹ کو حکم جاری نہیں کرسکتی ، عدالت نے قیدیوں کو معافی دینے ،صدر اور وزیر اعظم کے استثنی کے خلاف اوراسلامی کیلنڈر کے نفاذ کے لئے دائر درخواست نمٹا دی،غیرضروری درخواستیں دائر کرنے پر مقامی شہری اقتدار شاہ کی سرزنش لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس خالد محمود خان نے کیس کی سماعت کی۔ مقامی شہری کی جانب سے عدالت کو آگاہ کیا گیا کہ آئین کے آرٹیکل پینتالیس،248اور262اسلامی شریعت ،آئین پاکستان کے بنیادی ڈھانچے اور بنیادی حقوق سے متصادم ہیں۔ملک میں اختیار کیا گیا انگریزی کیلنڈر ختم کر کے اسلامی کیلنڈر اپنانے کا بھی حکم دیا جائے جس پر عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ عدالت پارلیمنٹ کو کوئی حکم صادر نہیں کر سکتی۔ عدالت نے غیرضروری درخواستیں دائر کرنے پر مقامی شہری اقتدار شاہ کی سرزنش کرتے ہوئے انکی درخواست چئیرمین سینٹ اور سپیکر قومی اسمبلی کو بھجواتے ہوئے ہدایت کی۔

درخواستیں نمٹا دیں

مزید :

صفحہ آخر -