نیودہلی،سرکاری فائلوں کے غائب ہونے کا الزام بندروں پر لگادیا

نیودہلی،سرکاری فائلوں کے غائب ہونے کا الزام بندروں پر لگادیا
 نیودہلی،سرکاری فائلوں کے غائب ہونے کا الزام بندروں پر لگادیا

  

نیودہلی (نیوز ڈیسک) بھارت میں ہزاروں کی تعداد میں اہم ترین سرکاری فائلوں کے غائب ہونے کا الزام بندروں پر لگادیا گیا ہے۔ بھارتی پارلیمنٹ کے ایوان بالا راجیا سبھا میں فائلوں کی گمشدگی پر بحث جاری تھی اور اپوزیشن کی طرف سے حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا جارہا تھا۔ اسی دوران کانگرس پارٹی کے سیاستدان راجیو شکلا نے بی جے پی حکومت کی نااہلی کو ہلکے پھلکے انداز میں نمایاں کرنے کیلئے کہا کہ اگر حکومت ان فائلوں کی گمشدگی کی ذمہ دار نہیں تو عین ممکن ہے کہ انہیں پارلیمنٹ میں آزادانہ گھومنے والے بندر اٹھالے گئے ہوں۔ واضح رہے کہ بھارتی دارالحکومت میں بندروں کی کثیر آبادی مسائل کا باعث بنتی رہتی ہے اور پارلیمنٹ میں بھی جابجا بندر گھومتے نظر آتے ہیں، حکومت پر الزام ہے کہ اس نے 11100 اہم سرکاری فائلوں کو غائب کردیا ہے۔ راجیو شکلا نے یہ بھی بتایا کہ جب سابق وزیراعظم من موہن سنگھ وزیر خزانہ ہوا کرتے تھے تو بندروں کی کثرت کی وجہ سے سیاستدانوں کا پارلیمنٹ میں داخلہ مشکل ہوگیا تھا اور بندروں کو بھگانے کیلئے لنگور بھرتی کرنا پڑے۔ انہون نے یہ بھی کہا کہ بی جے پی کے کچھ رہنما شریر اور سازشی بندروں کا تحفظ اور سرپرستی کررہے ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -